شیلا دیکشت کی لو اسٹوری: ونود دیکشت نے شیلا کو بس میں پرپوز کیا تھا

تعلیم کے دوران شیلا دیکشت کو ونود دیکشت سے محبت ہو گئی تھی اور اپنی محبت کو ہی انہوں نے اپنا شریک حیات بنایا

سوشل میڈیا 
سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

یہ تو سب کو معلوم ہے کہ شیلا دیکشت دہلی کی لگاتار تین مرتبہ وزیر اعلی رہیں اور دہلی میں انہوں نے اپنے دور اقتدار میں فلائی اووروں کا جال بچھا دیا لیکن بہت کم لوگوں کو معلوم ہے کہ ان کی شادی کیسے ہوئی تھی ۔ انہوں نے اپنی کتاب ’سٹیزن دہلی، مائی ٹائمس، مائی لائف‘ میں اپنی زندگی کے کئی ایسے لمحوں کا ذکر کیا ہے جن کے بارے میں بہت کم ہی لوگ واقف ہیں۔

ان لمحات میں سے ان کی زندگی کا ایک قیمتی لمحہ وہ ہے جب وہ اور ونود ایک دوسرے کو چاہنے لگے تھے ۔ اس کتاب میں انہوں نے ذکر کیا ہے کہ کیسے پہلی نظر میں ہونے والی محبت کو اپنا شریک حیات بنانے کے لئے انہیں دو سال تک انتظار کرنا پڑا تھا ۔ شیلا دیکشت نے لکھا ہے کہ کیسے تعلیم کے دور میں ان کی ملاقات ونود سے ہوئی تھی ۔ ونود کیونکہ ان کی محبت تھے تو ان کے بارے میں انہوں نے لکھا ہے کہ ونود ان کی کلاس کے باقی بیس طلبا ء سے کیسے جدا تھے۔ انہوں نے لکھا ہے ’’وہ (ونود) کافی الگ سا تھا اور اس کے بارے میں میری پہلی رائے کچھ مختلف تھی ۔ دمدار پرسنالٹی کے مالک ونود ایک اچھے کرکٹ کے کھلاڑی تھے۔اتفاق سے دونوں نے اپنے دوست کے محبت کے جھگڑے کو ختم کرانے کی کوشش کی تھی لیکن اس کوشش کے دوران دونوں خودہی ایک دوسرے کی محبت میں گرفتار ہو گئے ۔

شیلا دیکشت کی لو اسٹوری: ونود دیکشت نے شیلا کو بس میں پرپوز کیا تھا

شیلا نے لکھا ہے کہ وہ کئی مرتبہ چاہ کر بھی وہ ونود سے بات نہیں کر پاتی تھیں کیونکہ وہ تھوڑی کم گو تھیں جبکہ ونود خوب بات کرنے والے تھے ۔ انہوں نے اپنی دل کی بات کہنے کے لئے ونود کے ساتھ ایک گھنٹے تک ڈی ٹی سی بس کی سواری کی تھی ار پھر فیروز شاہ روڈ پر اپنی آنٹی کے گھر پر ونود کے ساتھ لمبا وقت گزارا تھا ۔ انہوں نے لکھا ہےڈی ٹی سی بس میں ونود نے شادی کے لئے خواہش کا اظہار کیا تھا ’’ونود نے بس میں شادی کے لئے پرپوز کیا تھا ۔ جب وہ فائنل ایئر کا ایگزام دینے والے تھے تب ایک دن پہلے 10 نمبر کی بس میں چاندنی چوک کے پاس ونود نے شیلا دیکشت کو بتایا تھا کہ وہ اپنی والدہ کو بتانے جا رہے ہیں کہ انہوں نے شادی کے لئے لڑکی کا انتخاب کر لیا ہے ۔ اس پر شیلا دیکشت نے ونود سے پوچھا تھا کہ کیا اس نے اس لڑکی سے دل کی بات پوچھ لی ہے تب ونود نے کہا تھا کہ نہیں لیکن وہ لڑکی بس میں میری سیٹ کے آگے بیٹھی ہے‘‘۔

شیلا دیکشت کی لو اسٹوری: ونود دیکشت نے شیلا کو بس میں پرپوز کیا تھا

اس کے بعد شیلا دیکشت نے اپنے والدین کو ونود کے بارے میں بتایا تھا لیکن اس وقت تک ونود طالب علم تھے اس لئے شیلا کے والدین نے بات کچھ آگے نہیں بڑھائی ۔ شیلا دیکشت نے اپنے ایک دوست کی والدہ کے نرسری اسکول میں سو روپے کی ٹیچر کی نوکری کرنا شروع کر دی ادھر ونود آئی اے ایس ایگزام کی تیاری کرنے لگے اور 1959 میں ان کا آئی اے ایس میں سلیکشن ہو گیا ۔ ونود نے اس کے بعد شیلا کو اپنے والد سے جن پتھ کے ہوٹل میں ملایا تھا اور اس ملاقات میں شیلا کافی نروس تھیں ۔ان کی شادی میں سب سے بڑی اڑچن ونود کا براہمن ہونا تھا اور ان کی والدہ بہت سخت مذہبی تھیں اس لئے ان کو منانے میں دو سال لگ گئے ۔

Published: 21 Jul 2019, 8:08 AM