سرکاری اعزاز کے ساتھ شیلا دیکشت کی آخری رسومات ادا

شیلا دیکشت کے انتقال پر سونیا گاندھی نے کہا کہ ’’وہ میرے لئے اہم سہارا تھیں اور میری بڑی بہن تھیں، کانگریس پارٹی کے لئے یہ بڑا خسارہ ہے، میں انہیں ہمیشہ یاد رکھوں گی۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

دہلی کانگریس کی صوبائی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ شیلا دیکشت کی آخری رسومات دہلی کے نگم بودھ گھاٹ پر ادا ہوئیں۔ انہیں پورے سرکاری اعزاز کے ساتھ آخری وداعی دی گئی۔ اس موقع پر سونیا گاندھی، پرینکا گاندھی اور منموہن سنگھ سمیت پارٹی کے دیگر اہم رہمنا شامل رہے۔ شیلا دیکشت کا ہفتہ کو دہلی کے ایکسارٹ اسپتال میں دورہ قلب کے پڑنے سے انتقال ہو گیا تھا۔

قبل ازیں، صبح 11 بجے شیلا دیکشت کا جسد خاکی ان کی نظام الدین واقع رہائش گاہ پر آخری دیدار کے لئے رکھا گیا، جہاں لال کرشن آڈوانی سمیت متعدد اہم رہنماؤں نے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ اس کے بعد جسد خاکی کانگریس پارٹی کے صدر دفتر لے جایا گیا جہاں یو پی اے کی چیئر پرسن سونیا گاندھی اور کانگریس پارٹی کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے انہیں خراج عقیدت پیش کیا۔ آخری دیدار کے بعد تقریباً 2 بجے شیلا دیکشت کا جسد خاکی جمنا ندی کے کنارے نگم بودھ گھاٹ کے لئے روانہ ہوا۔

شیلا دیکشت کے انتقال پر سونیا گاندھی نے کہا کہ ’’وہ میرے لئے اہم سہارا تھیں اور میری بڑی بہن تھیں۔ کانگریس کے لئے یہ بڑا خسارہ ہے۔ میں انہیں ہمیشہ یاد رکھوں گی۔‘‘


واضح رہے شیلا دیکشت نے 81 سال کی عمر میں ہفتہ کے روز دہلی کے ایسکارٹ اسپتال میں آخری سانس لی تھی۔ وہ کچھ وقت سے بیمار چل رہی تھیں جس کے بعد انہیں اسپتال میں داخل کرایا گیا، ہفتہ کے روز تقریاً 3.30 بجے دورہ قلب کے پڑنے سے ان کا انتقال ہو گیا تھا دہلی حکومت نے سابق وزیر اعلیٰ کے انتقال پر دہلی میں دو روزہ سوگ کا اعلان کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔