اترا کھنڈ میں بی جے پی کے کئی ایم ایل اے کانگریس کے رابطے میں ہیں، صرف گرین سگنل کا انتظار ہے

ریاست میں جس طرح مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے اور بی جے پی اپنے اصولوں اور سرگرمیوں سے ہٹ گئی ہے، اس سے بی جے پی کے ارکان اسمبلی میں زبردست بے چینی نظر آ رہی ہے۔

فائل تصویر یو این آئی
فائل تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

کانگریس لیڈر اور اتراکھنڈ قانون ساز اسمبلی میں اپوزیشن کے ڈپٹی لیڈر کرن مہرا نے بتایا کہ بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) کے کئی ایم ایل اے ان کے رابطے میں ہیں اور وہ صرف کانگریس کی منظوری کا انتظار کر رہے ہیں۔

مہرا نے بتایا کہ جس طرح سے ریاست میں مہنگائی اور بے روزگاری میں اضافہ ہوا ہے اور بی جے پی اپنے اصولوں اور سرگرمیوں سے ہٹ گئی ہے، اس سے بی جے پی کے ارکان اسمبلی میں زبردست بے چینی نظر آ رہی ہے ۔ زیادہ تر ایم ایل اے پارٹی کے پروگراموں میں بھی شرکت نہیں کر رہے ہیں۔


انہوں نے دعویٰ کیا کہ کافی ایم ایل اے ہیں جو بی جے پی چھوڑ کر کانگریس میں شامل ہونا چاہتے ہیں۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ بی جے پی کا اندرونی وہپ بہت سخت ہے اور اسی وجہ سے وہ اپنے اہل خانہ اور کاروبار سے خوفزدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اگر کانگریس انہیں یقین دلاتی ہے کہ کوئی انہیں پریشان نہیں کرے گا تو بی جے پی کے ایم ایل اے کی ایک بڑی تعداد کانگریس میں شامل ہوسکتی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔