ریلوے اسٹیشنوں کے سائن بورڈز سے نہیں ہٹے گی اردو زبان: ریلوے کی وضاحت

ریلوے نے واضح کیا ہے کہ اتراکھنڈ کے ریلوے اسٹیشنوں کے سائن بورڈز سے اردو زبان نہیں ہٹائی جائے گی اور ایک اضافی زبان کے طور پر اسٹیشنوں کے نام سنسکرت میں لکھے جائیں گے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: ریلوے نے اتراکھنڈ کے ریلوے اسٹیشنوں کے پلیٹ فارم پر سائن بورڈز سے اردو زبان کو ہٹا کر سنسکرت کے استعمال سے متعلق وضاحت پیش کر دی ہے۔ ریلوے کا کہنا ہے کہ سائن بورڈز سے اردو زبان کو ہٹانے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

عہدیداروں نے اس سے قبل سنسکرت کے استعمال سے متعلق ریلوے قوانین کا حوالہ دیا تھا لیکن اب ریلوے نے اردو کو ہٹائے جانے کی تردید کرتے ہوئے وضاحتی بیان جاری کیا ہے۔ ریلوے نے کہا کہ موجودہ زبانوں کے ساتھ سنسکرت کو ایک اضافی زبان کے طور پر استعمال کیا جا سکتا ہے۔ تاہم، اردو کو ہٹایا نہیں جائے گا۔

شمالی ریلوے کے چیف افسر تعلقات عامہ دیپک کمار نے یہاں بتایا کہ مختلف اخبارات میں اتراکھنڈ میں ریلوے اسٹیشنوں کے سائن بورڈوں سے اردو زبان کو ہٹانے کے سلسلہ میں شائع خبر کے ضمن میں یہ واضح کیا جاتا ہے کہ ہندوستانی ریلوے نے کسی بھی اسٹیشن سے نہ تو اردو زبان کو ہٹایا ہے اور نہ ہی ایسا کرنے کا کوئی ارادہ ہے۔

ریلوے اسٹیشنوں کے سائن بورڈز سے نہیں ہٹے گی اردو زبان: ریلوے کی وضاحت

دیپک کمار نے کہا کہ سنسکرت زبان کو ریلوے اسٹیشنوں پر لگے سائن بورڈز پر ایک اضافی زبان کے طور پر لکھی جا سکتی ہے لیکن اسے اردو زبان کو ہٹا کر نہیں لکھا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ یہ ہدایت بورڈز، سائن بورڈز، نام کی تختیوں پر زبانوں کے استعمال سے متعلق ریلوے بورڈ کے سرکلر اور وزارت داخلہ کے میمو کے مطابق ہے۔

اس سے پہلے راجیہ سبھا میں ریل وزیر پیوش گوئل نے ایک سوال کا جواب دیتے ہوئے کہا تھا کہ وزارت داخلہ کی طرف سے سائن بورڈز میں استعمال کی جانے والی زبان میں تبدیلی نہیں ہوئی ہے۔ انہوں نے واضح طور پر کہا کہ سائن بورڈز میں اردو زبان کو تبدیل نہیں کیا گیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ شمالی ریلوے کے چیف تعلقات عامہ کے افسر دیپک کمار نے ریلوے ضوابط کا حوالہ دیتے ہوئے واضح کیا تھا کہ پلیٹ فارم کے سائن بورڈ پر ریلوے اسٹیشنوں کا نام ہندی اور انگریزی کے بعد متعلقہ ریاست کی دوسری سرکاری زبان میں لکھا جانا چاہیے۔ انہوں نے کہا کہ سنسکرت یہاں کی دوسری زبان ہے، لہذا اس اصول کے تحت تبدیلیاں کی جا رہی ہیں۔

ریلوے کے اس دعوے کے بعد یہ خبر بھی منظر عام پر آئی تھی کہ ہریدوار جیسے کچھ اسٹیشنوں پر سائن بورڈ پر سنسکرت نظر آ رہی ہے۔ ادھر، انڈین ریلوے نے سنسکرت کو ہٹانے اور پہاڑی ریاست کے تمام اسٹیشنوں میں موجود سائن بورڈز پر اردو کے استعمال کی خبر کی تردید کی ہے۔ نیز، مستقبل میں بھی ایسا کرنے کا کوئی ارادہ نہیں ہے۔

Published: 8 Feb 2020, 5:11 PM
next