سماجوادی پارٹی کا ٹوئٹر ہینڈل آپریٹر گرفتار، غیر مہذب تبصرہ کرنے کا الزام، پولیس ہیڈکوارٹر پہنچے اکھلیش

لکھنؤ میں سماجوادی پارٹی کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہینڈل کرنے والے منیش جگن اگروال کو گرفتار کر لیا گیا ہے، ان پر ہینڈل سے نازیبا تبصرہ کرنے کے الزام میں مقدمہ درج کیا گیا ہے

<div class="paragraphs"><p>تصویر سوشل میڈیا</p></div>

تصویر سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

لکھنؤ: لکھنؤ میں سماجوادی پارٹی (ایس پی) کا ٹوئٹر اکاؤنٹ ہینڈل کرنے والے منیش جگن اگروال کو گرفتار کر لیا گیا ہے۔ لکھنؤ کے حضرت گنج پولیس اسٹیشن نے منیش جگن اگروال کو سماج وادی پارٹی کے ٹوئٹر ہینڈل پر کیے گئے نازیبا ریمارکس کے خلاف درج کیس کے سلسلے میں گرفتار کیا ہے۔ سیتاپور کے رہائشی منیش کی گرفتاری کے بعد اکھلیش یادو پولیس ہیڈ کوارٹر پہنچے۔

خیال رہے کہ، 6 جنوری کو لکھنؤ میں بی جے پی یووا مورچہ کی سوشل میڈیا انچارج ڈاکٹر ریچا راجپوت نے سماج وادی پارٹی میڈیا سیل کے ٹوئٹر ہینڈل کے خلاف عصمت دری اور جان سے مارنے کی دھمکیوں کا مقدمہ درج کرایا۔ اس کے ساتھ ہی ریچا راجپوت نے کہا تھا کہ اگر ان کے ساتھ کوئی واردات ہوتی ہے تو اس کے ذمہ دار سابق وزیر اعلی اکھلیش یادو ہوں گے۔

اس سے پہلے ایس پی میڈیا سیل @MediaCellSP نام کے اس اکاؤنٹ پر آر ایس ایس سے وابستہ پرمود کمار پانڈے نے وبھوتی کھنڈ پولیس اسٹیشن میں کیس درج کرایا تھا۔ ان پر ناشائستہ زبان استعمال کرنے کا بھی الزام تھا۔


اس سے قبل بی جے پی کے ترجمان راکیش ترپاٹھی نے ایس پی کے قومی صدر اکھلیش یادو اور ریاستی صدر نریش اتم پٹیل کے خلاف عدالت میں شکایت درج کرائی ہے، جس میں انہوں نے الزام لگایا ہے کہ سماج وادی پارٹی کے آفیشل ٹوئٹر ہینڈل سے مسلسل دھمکیاں دی جا رہی ہیں اور خاندان اور دیگر لوگوں کے بارے میں گالیاں دی جا رہی ہیں۔

ایک خاتون صحافی کے ساتھ دو صحافیوں نے بھی لکھنؤ کے مختلف مقامات پر ایس پی میڈیا سیل @MediaCellSP کے خلاف اپنی شکایت درج کرائی تھی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔