سماج وادی پارٹی اقلیتوں کو مشتعل کر کے پولرائزیشن کرواتی ہے: دنیش شرما

یوپی کے نائب وزیر اعلیٰ دنیش شرما نے کہا کہ ایس پی اقلیتوں کو مشتعل کر کے پولرائزیشن کرواتی ہے اور اس بار وہ یہ کام اسد الدین اویسی کے ذریعے کر رہی ہے

اتر پردیش کے نائب وزیر اعلیٰ دنیش شرما
اتر پردیش کے نائب وزیر اعلیٰ دنیش شرما
user

یو این آئی

نئی دہلی: اتر پردیش کے نائب وزیر اعلیٰ دنیش شرما نے الزام لگایا ہے کہ سماج وادی پارٹی (ایس پی) اقلیتوں کو مشتعل کرکے پولرائزیشن کر واتی ہے اور اس بار وہ یہ کام آل انڈیا مجلس اتحاد المسلمین (اے آئی ایم آئی ایم) کے سربراہ اسد الدین اویسی کے ذریعے کر رہی ہے۔

صحافیوں سے بات کرتے ہوئے دنیش شرما نے اویسی کو ایس پی کی ’بی ٹیم‘ قرار دیتے ہوئے الزام لگایا کہ وہ ایس پی اور بہوجن سماج پارٹی (بی ایس پی) کے انتخابی ایجنٹ کی طرح کام کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اپوزیشن پارٹیوں کو جان لینا چاہئے کہ اب بی جے پی کو چیلنج کرنے میں انھیں پچیس سال لگیں گے۔


شرما نے کہا کہ اتر پردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ کی حکومت میں مافیا، بدعنوانوں، مکانوں پر قبضہ کرنے والوں، خواتین کی توہین کرنے والوں، کسانوں اور عوام کا استحصال کرنے والوں کے لیے کوئی جگہ نہیں ہے، لیکن حکومت عام غریبوں کی فلاح و بہبود کے لیے پُر عزم ہے۔

یوگی حکومت سے برہمن برادری کی ناراضگی کے بارے میں قیاس آرائیوں سے متعلق ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا ،’برہمن ایک ذات نہیں ، تہذیب ہے،، یہ ایک عمدہ طرز زندگی کا نام ہے۔ اپوزیشن پارٹیوں کو برہنموں کی بابت غلط فہمی ہے۔ برہمن، دلت اور او بی سی سمیت سماج کا ہر طبقہ اترپردیش میں بی جے پی کے ساتھ ہے‘۔

شرما نے کہا کہ اتر پردیش جو کبھی غیر قانونی بندوقوں اور پستولوں کے لیے جانا جاتا تھا، جدید ترین رائفلیں اور برہموس میزائل بنانے جا رہا ہے۔ اتر پردیش جرائم کی نہیں صنعت کی ریاست بن گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کی وجہ سے، کچھ پشیمانہ رام بھکت گھنٹی بجانے اور ہنومان چالیسہ پڑھنے کی مشق کر رہے ہیں، لیکن ریاست کے عوام بی جے پی کے ساتھ ہیں اور بی جے پی 2022 میں جیت کے اپنے سابقہ ​​ریکارڈ کو توڑنے جا رہی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔