جموں: ’ویشنو دیوی یونیورسٹی‘ میں زیر تعلیم 13 طلبا کورونا کے شکار، ادارہ تا حکم ثانی بند

کم از کم 13 طلبا کی کورونا رپورٹ مثبت آنے کے بعد ضلع انتظامیہ ریاسی نے شری ماتا ویشنو دیوی یونیورسٹی کو تا حکم ثانی بند رکھنے کے احکامات صادر کئے ہیں

تصویر بشکریہ ٹوئٹر
تصویر بشکریہ ٹوئٹر
user

یو این آئی

جموں: کم از کم 13 طلبا کی کورونا رپورٹ مثبت آنے کے بعد ضلع انتظامیہ ریاسی نے شری ماتا ویشنو دیوی یونیورسٹی کو تا حکم ثانی بند رکھنے کے احکامات صادر کئے ہیں۔

ضلع ترقیاتی کمشنر ریاسی چرندیپ سنگھ کی جانب سے جاری ایک حکم نامہ کے مطابق ماتا ویشنو دیوی یونیورسٹی میں زیر تعلیم 13طالب علموں میں کورونا کی تشخیص کے بعد وائرس کے پھیلاو کو روکنے کی خاطر اگلے احکامات تک یونیورسٹی کو فوری طورپر بند کرنے کی ہدایت دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ متاثرین کے رابطے میں آنے والے طلاب کو بھی الگ تھلگ رہنے کی تاکید کی گئی ہے۔


ادھر چیف میڈیکل آفیسر ریاسی نے بتایا کہ 31 دسمبر اور یکم جنوری کو شری ماتا ویشنودیوی یونیورسٹی کیمپس میں زیر تعلیم طالب علموں کے ٹیسٹ کئے گئے جس دوران 13کی رپورٹ مثبت آئی۔ انہوں نے کہا کہ متاثرہ سٹوڈنٹس کو فوری طورپر کورنٹائن کیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ جموں وکشمیر میں کورونا وائرس کے یومیہ کیسز لگاتار بڑھ رہے ہیں اور حکام کی جانب سے رہنما اصولوں پر عملدرآمد کی خاطر بیداری مہم بھی شروع کی گئی ہے لیکن اس کے باوجود بھی لوگ ماسک کے بغیر ہی گھروں سے باہر آرہے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔