ریلائنس جیو: چھوٹے تاجروں کے لیے سستا اور کفایتی براڈ بینڈ پلان

جیو بزنس کے فائدے کے بارے میں بتاتے ہوئے آکاش امبانی نے کہا کہ اس سے صنعتوں کو اچھے صارفین کا تجربہ حاصل ہوگا۔

علامتی تصویر
علامتی تصویر
user

یو این آئی

نئی دہلی: جیو بزنس نے مائیکرو، اسمال اینڈ میڈیم بزنس(ایم ایس ایم ای) کے لئے سستے اور کفایتی براڈ بینڈ پلان لانچ کیے ہیں یہ پلان انٹر پرائزگریڈ فائبر کنیکٹویٹی کے ساتھ ہیں اور ان کے ساتھ کالنگ اور ڈیٹا، دونوں کی سہولت ملے گی اس کے ساتھ ہی جیو بزنس کے تحت کمپنی ڈیجیٹل سلوشن بھی دے گی، جس سے بزنس مالکان کو اپنے کاروبار کو نظم اور اسے فروغ دینے میں مدد ملے گی۔

جیو بزنس کے بارے میں بتاتے ہوئے آکاش امبانی نے کہا کہ مائیکرو، اسمال اینڈ میڈیم کاروبار بھارتی معیشت کی بنیاد ہیں۔ جیو بزنس چھوٹے تاجروں کو انٹیگریٹڈ انٹر پرائز۔ گریڈ سروسز اور ڈیجیٹل سلوشن فراہم کرکے ان کی مدد کرے گا۔


انہوں نے مزید کہا کہ آسان سلوشن انہیں اپنی تجارت کو ماہرانہ انداز میں چلانے اور بڑی صنعتوں کے ساتھ مقابلہ کرنے میں مدد کریں گے۔ فی الحال ایک مائیکرو اینڈ اسمال انڈسٹری، کنیکٹویٹی، پروڈکٹیویٹی اور آٹو میشن ٹولز پر 15 ہزار سے 20 ہزار روپے ہر مہینے خرچ کرتی ہیں۔ ہم اس قیمت کے دسویں حصے میں پوری کنیکٹیویٹی فراہم کر رہے ہیں۔ آج ہم اپنی بہتر کنیکٹیویٹی کے ساتھ اچھا پلان لائے ہیں۔ جو چھوٹے کاروباریوں کو مضبوط بنانے کی سمت میں پہلا قدم ہے۔

جیو چھوٹے کاروباریوں کو 901 روپے میں براڈ بینڈ اور کالنگ سروس آفر کر رہا ہے۔ جیو کے اس پلان کے ساتھ صارفین کو 100 ایم بی پی ایس کی اپ لوڈ اورڈاون لوڈ انٹر نیٹ سپیڈ ملے گی۔ ساتھ ہی ایک ان لمیٹڈ کالنگ والا براڈ بینڈ کنیکشن بھی دیا جائے گا۔


آکاش انبانی نے مزید کہا مجھے پورا یقین ہے کہ اس قدم کے ساتھ لاکھوں مائیکرو، اسمال اینڈ میڈیم انڈسٹریز خوشحالی و ترقی کی جانب تیزی سے آگے بڑھنے کے قابل ہوں گی اور ایک نیا خود کفیل ڈیجیٹل بھارت بنانے میں اپنا تعاون دیں گے۔

جیو بزنس کے فائدے کے بارے میں بتاتے ہوئے آکاش امبانی نے کہا کہ اس سے صنعتوں کو اچھے صارفین کا تجربہ حاصل ہوگا۔ کنزیومر لائف سائیکل کے مابین بہترین بنیاد فراہم کریں گے اور بزنس کو آن لائن کرنے میں مدد ملے گی جس سے ان کے ریونیو میں اضافہ ہوگا۔ بزنس کو آن لائن بنانے کے ساتھ ہی چوبیس گھنٹے سہولت کے ساتھ ملازمین، صارفین اور تجارت کو کبھی بھی کہیں سے بھی چلانے میں معاون ہوگا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔