ترقی کے لئے تبدیلی کو پہچانیں اور اپنائیں: سی ایم کمل ناتھ

وزیر اعلی کمل ناتھ نے کہا ہے کہ سب سے بڑی ضرورت ہے کہ ہم ملک و دنیا اور اپنے گردونواح میں ہو رہی تبدیلیوں کو پہچانیں اور اسے اپنائیں تبھی ہم ترقی کر سکتے ہیں

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

یو این آئی

بھوپال: مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی کمل ناتھ نے کہا ہے کہ آج سب سے بڑی ضرورت ہے کہ ہم ملک و دنیا اور اپنے گردونواح میں ہو رہی تبدیلیوں کو پہچانیں اور اسے اپنائیں تبھی ہم ترقی کر سکتے ہیں۔ کمل ناتھ گزشتہ رات منٹو حال میں كنفیڈریشن آف ایم پی فار انڈسٹریز سروس اینڈ ٹریڈ تقریب سے خطاب کر رہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ کاروبار، تجارت اور چھوٹی صنعتوں سے منسلک مسائل کے حل اور تجاویز کے لئے چیف سکریٹری کی سربراہی میں ایک کمیٹی تشکیل دی جائے گی۔ یہ کمیٹی وقتاً فوقتاً تاجروں کے نمائندوں سے بات چیت کر کے مسائل کو حل کرے گی۔ انہوں نے کہا کہ ریاست کے کاروبار، تجارت اور چھوٹی صنعتوں کی مدھیہ پردیش کی ترقی، معیشت کو مضبوط بنانے اور اقتصادی سرگرمیاں بڑھانے میں اہم تعاون ہے۔

ان کے بغیر ہم صوبہ کی مجموعی ترقی کا تصور بھی نہیں کر سکتے۔ انہوں نے کہا کہ تبدیلی کو ہم کس طرح پہچانیں اور کس طرح اپنائیں، یہ ہمارے سامنے آج سب سے بڑا چیلنج ہے۔ انہوں نے کہا کہ آج سے بیس سال قبل جو بڑی بڑی کمپنیاں تھیں، وہ اب نہیں ہیں کیونکہ انہوں نے تبدیلی کی لہر کو نہیں پہچانا۔

وہ کمپنیاں جو وقت کے ساتھ آگے بڑھیں، انہوں نے ایک مقام حاصل کیا ہے۔ انہوں نے اوبر اور اولا کمپنی کی مثال دیتے ہوئے کہا کہ کم وقت میں انہوں نے ٹریڈ کاروبار کے میدان میں جو ترقی کی ہے، اس کے پیچھے اصل وجہ تھی انہوں نے تبدیلی کے دور کو پہچانا اور کامیابی پائی۔

انہوں نے کہا کہ ہم انتظامیہ کو بھی تبدیلیوں سے ہمکنار کرنا چاہتے ہیں۔ اس سمت میں ہماری کوششیں جاری ہیں۔ اگر ہم نے حکومت چلانے کے کام کاج میں تبدیلی نہیں کی تو ترقی کے معاملے میں ہم پچھڑ جائیں گے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ مدھیہ پردیش میں ہم نے ہر سطح پر تبدیلی کی کوشش کی ہے۔

میگنی فیشنٹ ایم پی کے ذریعے ایک ماحول تیار کیا ہے، جس کے ذریعے سرمایہ کاروں کا اعتماد ہمیں حاصل ہوا ہے۔ گزشتہ ساڑھے سات ماہ کی مدت میں ہم نے نظام کی ان چھوٹی چھوٹی پریشانیوں کو پہچانا ہے، جن کی وجہ سے سرمایہ کاروں کو پریشانی تھی۔ انہوں نے مثال دی کہ اضافی اراضی ہونے کے بعد بھی اس پر دیگر صنعت نہ چلا پانا اور سب لیز جیسے التزام کو ہم نے خارج کر دیا۔ اس کی وجہ سے لوگوں کا حکومت پر اعتماد پیدا ہوا ہے۔

Published: 23 Oct 2019, 1:59 PM