آج کی کسان مہاپنچایت تاریخی ہوگی:ٹکیٹ

ٹیکت نے کہا کہ وہ کسان تحریک شروع ہونے کے بعد سے اپنے آبائی ضلع کی سرحد میں نہیں گئے ہیں کیونکہ انہوں نے زرعی بل کی واپسی نہیں تو گھر واپسی نہیں کی قسم لے رکھی ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

بھارتیہ کسان یونین کے قومی ترجمان راکیش ٹکیٹ نے کہا کہ آج جی آئی سی میدان میں ہونے والی کسان مہاپنچایت تاریخی ہوگی اور جب تک حکومت کسانوں کے مطالبات نہیں مانے گی تب تک تحریک جاری رہے گی۔

ٹکیٹ نے یہاں جاری بیان میں کہا کہ کل ہونے والی اس پنچایت کو کسان اور مزدور اپنی 'اسمتا' سے جوڑ کر دیکھ رہے ہیں اور مظفر نگر کی یہ پنچایت تاریخی ہوگی۔انہوں نے کہا کہ وہ کسان تحریک شروع ہونے کے بعد سے اپنے آبائی ضلع کی سرحد میں نہیں گئے ہیں۔ انہوں نے زرعی بل کی واپسی نہیں تو گھر واپسی نہیں کی قسم لے رکھی ہے۔ اس لئے وہ تحریک شروع ہونے کے بعد آج تک مظفر نگر کی سرحد میں نہیں گئے ہیں۔


انہوں نے کہا کہ جوائنٹ کسان مورچہ کے حکم پر وہ اتوار کو مظفر نگر میں بلائی گئی مہاپنچایت میں ضرور پہنچیں گے لیکن اپنے گھر نہیں جائیں گے۔انہوں نے بتایا کہ مہاپنچایت کے پروگرام کا براہ راست ترسیل کرنے کے لئے بڑے ۔بڑے اسکرین لگائے جارہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ باہر سے آنے والے سبھی مہمانوں کا ہمیں مظفر نگر کے روایات کے مطابق میزبانی کو تیار رہان ہے۔

انہوں نے بتایا کہ اس مہاپنچایت کی خاص بات ہے کہ اس پورے کسان تحریک کے دوران نریش ٹکیٹ اور راکیش ٹکیٹ ایک ساتھ اسٹیج پر نظر آئیں گے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔