راجستھان: اومیکرون کے مریض کی موت، ویکسین کی دونوں خوراکیں لگوائی تھیں، رپورٹ 2 بار منفی آئی تھی!

کورونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون کے سبب ادے پور میں ایک 75 سالہ بزرگ کی موت ہو گئی، حیران کن بات یہ ہے کہ بزرگ کی کورونا کی رپورٹ دو مرتبہ منفی آ چکی تھی

کورونا وائرس، علامتی تصویر / Getty Images
کورونا وائرس، علامتی تصویر / Getty Images
user

قومی آوازبیورو

ادے پور: ملک بھر میں کورونا کے معاملوں میں اضافہ کے درمیان راجستھان کے شہر ادے پور میں کورونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون سے متاثرہ ایک بزرگ کی جان چلی گئی ہے۔ حرانی کی بات یہ ہے کہ 75 سالہ بزرگ کی کورونا کی رپورٹ دو مرتبہ منفی قرار دی جا چکی تھی۔

میڈیا رپورٹ کے مطابق بزرگ کا ادے پور کے مہارانا بھوپال اسپتال میں علاج چل رہا تھا۔ 15 دسمبر کو طبیعت خراب ہونے پر انہیں علاج کے لئے اسپتال لے جایا گیا تھا۔ اس دوران ان کی کورونا کی جانچ کرائی گئی، جس میں وہ اس سے متاثرہ پائے گئے۔ اس وقت سے ہی وہ اسپتال میں داخل تھے۔ ان کے نمونے کو جینوم سیکونسنگ کے لئے پونے کی لیب میں بھیجا گیا۔ جہاں ان میں کورونا کے نئے ویرینٹ اومیکرون کی تصدیق کی گئی۔


خیال رہے کہ بزرگ میں بخار، کھانسی اور ناک کی سوزش کی علامات کے سبب 15 دسمبر کو ان کا کورونا ٹیسٹ کیا گیا تھا جس میں وہ مثبت پائے گئے تھے۔ اس کے بعد 21 دسمبر کو دوبارے کرائے گئے کورونا کے ٹیسٹ وہ منفی پائے گئے۔ لیکن 25 دسمبر کو جب جینوم سیکونسنگ کی رپورٹ آئی تو مریض میں ایک نئے ویرینٹ اومیکرون کی تصدیق کی گئی۔

اس کے بعد ڈاکٹروں نے 25 دسمبر کو دوبارہ ان کا کورونا ٹیسٹ کیا، جس کی رپورٹ نگیٹو آئی۔تاہم تمام تر پیچیدگیوں کے بعد 31 دسمبر کو مریض کی موت ہو گئی۔ مریض کی غیر ملکی سفر کی کوئی تاریخ نہیں تھی، جبکہ مریض کو کورونا ویکسین کی دونوں خوراکیں دی جا چکی تھیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔