راجستھان :جودھ پور میں 80 سے زائد نقل مکانی کرنے والے پرندوں کی موت

راجستھان کے ضلع جودھ پور میں مبینہ طور پر رانی کھیت کی بیماری کی وجہ سے 80 سے زیادہ نقل مکانی کرنے والے پرندے کرجاں (ڈیموئسیل کرین) کی موت ہو گئی

علامتی تصویر / آئی اے این ایس
علامتی تصویر / آئی اے این ایس
user

یو این آئی

جودھ پور: راجستھان کے ضلع جودھ پور میں مبینہ طور پر رانی کھیت کی بیماری کی وجہ سے 80 سے زیادہ نقل مکانی کرنے والے پرندے کرجاں (ڈیموئسیل کرین) کی موت ہو گئی۔ موصولہ اطلاع کے مطابق ضلع کے کاپراڈا گاؤں میں سیز ہائی وے پر واقع تالاب پر ہزاروں کلومیٹر کا سفر کرنے کے بعد پیر کے روز موسم سرما میں ہجرت کرتے ہوئے سات کرجنوں کی موت ہو گئی۔ اس دوران کئی کرجاں بیمار ہو گئے جن کا بلارا میں قائم عارضی ریسکیو سنٹر میں علاج کیا جا رہا ہے۔

محکمہ جنگلات، ویٹرنری اسپتال اور جنگلی حیات کے ماہرین کی ٹیمیں کرجاں کی جان بچانے میں مصروف ہے۔ محکمہ جنگلات کے حکام کے مطابق مردہ پرندوں کے وسرا کی جانچ کے لیے بھوپال بھیج دیا گیا ہے اور رپورٹ آنے کے بعد ہی موت کی اصل وجہ معلوم ہو سکے گی۔ بتایا جا رہا ہے کہ رانی کھیت وائرل پھیلنے کی وجہ سے یہ پرندے مر رہے ہیں تاہم تحقیقات کے بعد ہی ٹھوس وجوہات کا پتہ چل سکے گا۔ خیال رہے اس بیماری میں پرندوں کی ٹانگیں اور پر مفلوج ہو جاتے ہیں۔


قابل ذکر ہے کہ ہر سال ہزاروں کی تعداد میں یہ پرندے منگولیا، قازقستان وغیرہ سے گروپوں کی شکل میں ضلع جودھ پور کے کھینچن اور دیگر مقامات اور ضلع جیسلمیر کے مختلف علاقوں میں موسم سرما کی ہجرت کے لیے آتے ہیں اور اس بار بھی ہزاروں کی تعداد میں مختلف مقامات پر پرندوں نے ڈیرے ڈال لیے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔