راجستھان بجٹ: 500 روپے میں گیس سلنڈر، مفت بجلی اور تعلیم، گہلوت حکومت کے بجٹ کے اہم اعلانات

راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے بجٹ میں گھریلو صارفین کو 100 یونٹ تک مفت بجلی فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس کے ساتھ خواتین، نوجوانوں اور کسانوں کے حوالے سے بھی کئی وعدے کیے گئے ہیں

<div class="paragraphs"><p>تصویر سوشل میڈیا</p></div>

تصویر سوشل میڈیا

user

قومی آوازبیورو

جے پور: راجستھان کے وزیر اعلی اشوک گہلوت نے ریاست کے اگلے مالی سال کے لئے بجٹ پیش کر دیا۔ اس بجٹ میں وزیر اعلیٰ گہلوت نے خواتین، نوجوانوں اور کسانوں کے لیے کئی اہم وعدے کیے ہیں۔ وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت نے اعلان کیا کہ راجستھان میں نوجوانوں کے لیے بھرتی کے تمام امتحانات کے لیے کوئی فیس نہیں ہوگی۔ اس کے علاوہ پیپر لیک جیسے واقعات کے لیے خصوصی ٹاسک فورس تشکیل دی جائے گی۔ بھرتی کے تمام امتحانات کے لیے صرف ایک بار فیس ادا کرنی ہوگی۔ گورنمنٹ کالج کیمپس میں 100 روزگار میلوں کا انعقاد کیا جائے گا۔

وزیر اعلی اشوک گہلوت نے بجٹ میں گھریلو صارفین کو 100 یونٹ تک مفت بجلی فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اس اسکیم کا نفاذ اگلے سال سے ہو جائے گا۔ اس سے ریاست کے ایک کروڑ 19 لاکھ میں سے ایک کروڑ 4 لاکھ خاندان گھریلو بجلی مفت حاصل کر سکیں گے۔

وزیر اعلیٰ گہلوت نے کہا کہ میں جے پور میں اے پی جے عبدالکلام انسٹی ٹیوٹ آف بائیو ٹیکنالوجی کا قیام کیا جائے گا۔ اس پر 300 کروڑ روپے خرچ ہوں گے۔


وزیر اعلیٰ گہلوت نے اعلان کیا کہ طلبا راجستھان میں 75 کلومیٹر تک سرکاری بسوں میں مفت سفر کر سکیں گے۔ اسکل ڈیولپمنٹ پر 100 کروڑ روپے خرچ ہوں گے۔ شہری اور دیہی علاقوں میں ایک ایک ہزار اسکول اور 2000 مہاتما گاندھی اسکول کھولے جائیں گے۔

راجستھان میں لڑکیوں کے ساتھ لڑکوں کو بھی حق تعلیم کے تحت پہلی سے 12ویں تک مفت تعلیم دی جائے گی۔ راجستھان میں چرنجیوی یوجنا کے تحت علاج کے لیے بیمہ کی رقم 10 لاکھ سے بڑھا کر 25 لاکھ کر دی گئی ہے۔

سی ایم گہلوت نے بجٹ میں اعلان کیا ہے کہ راجستھان کے 76 لاکھ خاندانوں کو 500 روپے میں ایل پی جی سلنڈر فراہم کیا جائے گا۔

وزیر اعلیٰ گہلوت نے اعلان کیا کہ اقتصادی طور پر کمزور خاندانوں کو چرنجیوی یوجنا کا فائدہ دیا جائے گا۔ حادثاتی بیمہ کی رقم 5 لاکھ سے بڑھا کر 10 لاکھ کی جائے گی۔

اپنی بجٹ تقریر کے دوران وزیر اعلیٰ گہلوت نے اعلان کیا کہ مرکز برائے پوسٹ کووڈ-19 اب بحالی مرکز بن جائے گا اور آر یو ایچ ایس میں بحالی مرکز تعمیر کیا جائے گا۔

راجستھان روڈ ویز میں خواتین کو کرایہ میں 50 فیصد رعایت ملے گی، پہلے یہ رعایت 30 فیصد ہوتی تھی۔ اجتماعی شادیوں میں قابل ادائیگی گرانٹ کی رقم 18 ہزار روپے سے بڑھا کر 25 ہزار روپے کر دی گئی ہے۔ اگر 25 جوڑوں کی اجتماعی شادی ہوتی ہے تو اس تقریب کے لیے 10 لاکھ روپے کی امداد دی جائے گی۔


بجٹ میں سی ایم گہلوت نے اعلان کیا کہ ریاست کے 3 اضلاع میں میڈیکل کالج اور جودھپور میں مارواڑ میڈیکل یونیورسٹی تعمیر کی جائے گی۔

بجٹ کے دوران وزیر اعلی اشوک گہلوت نے پرانی پنشن اسکیم کو پورے ملک میں نافذ کرنے کا مطالبہ کیا۔ اس کے ساتھ راجستھان میں سوشل سیکورٹی پنشن کے لیے بھی قانون لایا جائے گا۔ ضلعی سطح پر روڈ سیفٹی ٹاسک فورس بھی تشکیل دی جائے گی۔

وزیر اعلیٰ گہلوت نے اعلان کیا ہے کہ مہاتما گاندھی کم از کم گارنٹی اسکیم ریاست میں نافذ کی جائے گی۔ اس کے علاوہ راجستھان میں 30 ہزار صفائی ملازمین کی بھرتی کی جائے گی۔

وزیر اعلیٰ نے اعلان کیا ہے کہ راجستھان ٹیلنٹ سرچ امتحان اسکالرشپ 10ویں جماعت کے طلباء کے لیے این ٹی ایس ای کی طرز پر شروع ہوگی۔ جس کے تحت ہر سال 10 ہزار طلبا کو اسکالرشپ فراہم کی جائے گی۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;