ٹیکہ کاری کی سست رفتار پر راہل گاندھی کا سوال، پوچھا- ’کہاں ہے ویکسین؟‘

راہل گاندھی نے کورونا کی ٹیکہ اندوزی کی سست رفتار کے سلسلہ میں حکومت پر ہفتے کے روز پھر حملہ کیا اور گراف کی مدد سے سمجھایا کہ 12 دنوں سے ٹیکہ کاری کا ہدف حاصل نہیں کیا جا سکا

راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس کے سابق صدر راہل گاندھی نے کورونا ویکسین کی قلت اور ٹیکہ اندوزی کی سست رفتار کے سلسلے میں حکومت پر ہفتے کے روز ایک مرتبہ پھر حملہ بولا۔ راہل گاندھی نے ایک گراف کی مدد سے سمجھایا کہ کس طرح سے یکم جولائی تک 12 دنوں میں ویکسین کی قلت کی وجہ سے ٹیکہ کاری کا ہدف حاصل نہیں کیا جا سکا۔

راہل گاندھی نے ایک جملے میں ٹوئٹ کیا ’’فرق پر دھیان دیجئے۔ کہاں ہے ویکسین ‘‘۔ انہوں نے گراف کے ذریعے سمجھایا کہ کورونا کی تیسری ممکنہ لہرکا مقابلہ کرنے کے لئے 18 جون کو یومیہ 69.5 لاکھ ویکسینیشن کا ہدف تھا، لیکن یکم جولائی تک ہدف سے 27 فیصد کم محض 50.8 لاکھ افراد کو یومیہ ٹیکے لگائے گئے۔


واضح رہے کہ کورونا ویکسین کی کمی کی وجہ سے راہل گاندھی حکومت کو مسلسل تنقید کا نشانہ بنا رہے ہیں، جس پر حکومت کے وزرا بھی اپنا رد عمل ظاہر کر رہے ہیں۔ اس سے واضح ہے کہ حکومت راہل گاندھی کے سوالوں سے پریشان ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔