تیل اور گیس قیمتوں پر نافذ 'لاک ڈاؤن' ختم، اب حکومت قیمتوں کا کرے گی 'وکاس'! راہل گاندھی

سلنڈر قیمتوں میں 50 روپے اور پٹرول-ڈیزل کے داموں میں 80 پیسے کے اضافہ پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے راہل گاندھی نے کہا ’’اگر آپ مہنگائی کی وبا کے بارے میں پوچھیں گے تو وہ کہیں گے تھالی بجاؤ!‘‘

راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
راہل گاندھی، تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

5 ریاستوں میں ہونے والے اسمبلی انتخابات کے نتائج آنے کے صرف 11 دن بعد کانگریس لیڈر راہل گاندھی نے ایندھن کی قیمتوں میں اضافے پر مودی حکومت کو گھیرا ہے۔ راہل گاندھی نے ٹوئٹ کر کے لکھا، "گیس، ڈیزل اور پٹرول کی قیمتوں پر لگا ’لاک ڈاؤن‘ ہٹ گیا ہے۔ اب حکومت قیمتوں کا مسلسل 'وکاس' کرے گی۔" راہل گاندھی نے مزید کہا کہ مہنگائی کی وبا کے بارے میں اگر وزیر اعظم سے پوچھیں گے تو وہ کہیں گے ’تھالی بجاؤ‘۔

خیال رہے کہ ایل پی جی کی قیمتوں میں 50 روپے فی سلنڈر کا اضافہ کیا گیا ہے، جبکہ پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں 80 پیسے کا اضافہ کیا گیا ہے۔ دریں اثنا، کانگریس لیڈر ملکارجن کھڑگے نے ٹوئٹر پر کہا "ملک کے بیشتر حصوں میں 1000 روپے فی ایل پی جی سلنڈر کا 'ہدف' حاصل کرنے کے لئے وزیر اعظم مودی کو مبارکباد۔ اب پٹرول اور ڈیزل کی قیمتوں میں بھی روزانہ 'وکاس' ہوگا۔ مودی حکومت میں صرف فرقہ پرستی اور نفرت سستی ہے، اس کے علاوہ سب کچھ مہنگا ہے۔


اسی معاملہ پر کانگریس پارٹی کے ایک بیان میں کہا گیا ’’کچھ تو رحم کرتی مودی سرکار۔ ابھی تو ریاستی حکومتیں تشکیل بھی نہیں دی گئی ہیں اور بی جے پی نے مہنگائی کے ساتھ گٹھ جوڑ کر لیا! یوپی میں امت شاہ نے کہا تھا کہ چناؤ جتاؤ اور ہولی پر مفت گیس سلنڈر پاؤ۔ مفت تو دیئے نہیں، بلکہ اور مہنگے سلنڈر کر دیئے ہیں۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔