رام دیو کے خلاف ہریانہ میں احتجاج، ڈاکٹروں اور کسانوں نے دکھائے سیاہ پرچم

ہریانہ پہنچنے پر ’انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن‘ کے ممبران اور مختلف جمہوری تنظیموں سے جڑے لوگوں نے رام دیو کو کالے جھنڈے دکھا کر احتجاج کیا اور ان کے خلاف کارروائی کرنے کا مطالبہ کیا

ویڈیو گریب
ویڈیو گریب
user

قومی آوازبیورو

بھیوانی: ڈاکٹروں اور ایلوپیتھی کے خلاف بیان بازی کرنے والے یوگا گرو کو لگاتار ڈاکٹروں کی مخالفت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ گزشتہ روز ہریانہ پہنچنے پر انڈین میڈیکل ایسوسی ایشن کے ممبران اور مختلف جمہوری تنظیموں سے جڑے لوگوں نے رام دیو کو کالے جھنڈے دکھائے۔ رام دیو ہریانہ کے بھیوانی میں کسی تقریب میں شرکت کے لئے پہنچے تھے۔

جیسے ہی لوگوں کو رام دیو کی موجودگی کا علم ہوا وہ موقع پر جمع ہو گئے۔ آئی ایم اے، ہریانہ کے صدر ڈاکٹر کرن پونیا اور ان کے ساتھی، کسان سبھا، ٹیچر یونین اور پیپلز ویمن کمیٹی وغیرہ کے کارکنان رام دیو کے خلاف احتجاج کیا۔ مظاہرین میں کرتار گریوال، اوم پرکاش، وزیرسنگھ اور سنتوش ڈیراوال وغیرہ شامل تھے۔ اس موقع پر رام دیو کے خلاف نعرہ بازی کی گئی اور ان پر غداری کا مقدمہ درج کرنے اور انہیں گرفتار کرنے کامطالبہ کیا گیا۔


ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ رام دیو کی میڈیکل پریکٹیشنرز اور ایلوپیتھی کے خلاف کی گئی بیان بازی سے ان طبی اہلکاروں کی دل آزاری ہوئی ہے جو دن رات اس بیماری میں مبتلا مریضوں کی خدمات انجام دے رہے ہیں۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ وہ غیر مشروط معافی مانگیں بصورت دیگر ان کے خلاف وبائی قانون کے تحت کارروائی کی جائے۔

خیال رہے کہ حال ہی میں ایک ویڈیو کلپ وائرل ہوئی تھی جس میں رام دیو کورونا وائرس کے علاج میں استعمال کی جا رہی کچھ ادویات پر سوال اٹھاتے ہیں نیز یہ بھی کہتے ہیں ’’لاکھوں افراد کورونا کے علاج کے لئے ایلوپیتھی کی ادویات لینے کی وجہ سے مر گئے ہیں۔‘‘

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 08 Jun 2021, 4:11 PM