وزیر اعظم مودی کو ممتا بنرجی سے معافی مانگنی چاہیے: ترنمول کانگریس

ترنمول کانگریس نے سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ جان بوجھ کر ممتا بنرجی کی توہین کرنے کی کوشش کی گئی ہے ۔اس لئے اس واقعے پر وزیر اعظم مودی کو معافی مانگنی چاہیے

ممتا بنرجی، تصویر آئی اے این ایس
ممتا بنرجی، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

کلکتہ: نتیاجی کی جینتی کے موقع پر وکٹوریہ میموریل پر منعقد تقریب میں وزیرا عظم مودی کی موجودگی میں جے شری رام کے نعرے لگائے جانے پر ترنمول کانگریس نے سخت تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ جان بوجھ کر ممتا بنرجی کی توہین کرنے کی کوشش کی گئی ہے ۔اس لئے اس واقعے پر وزیر اعظم مودی کو معافی مانگنی چاہیے۔

ترنمول کانگریس نے وکٹوریہ میموریل کی تقریب کے دوران وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی کے ڈائس پر بلائے جانے کے دوران ’’جے شری رام‘‘ کا نعرہ لگائے جانے پر تبصرہ کرتے ہوئے ترنمول کانگریس کے ترجمان کنال گھوش نے کہا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو اس واقعے پر معافی مانگنی چاہئے تھی۔ انہوں نے الزام لگایا کہ بی جے پی نے نیتا جی کی سالگرہ کے موقع پر سیاست کی، یہ بنگال کی تہذیب و کلچر پر حملہ ہے۔

کنال گھوش نے کہا کہ بی جے پی والوں کو اسی لئے باہری کہا جاتا ہے کیوں کہ وہ بنگال کی ثقافت کو نہیں جانتے۔ انہوں نے کہا کہ جن لوگوں نے نیتا جی کی سالگرہ پر جے شری رام کے نعرے لگائے وہ نہیں جانتے کہ آج کا دن اس ’جے ہند‘ کے نعرے کا ہے، جسے نتیاجی نے لگایا تھا۔

خیال رہے کہ مرکزی وزیر پرہلاد سنگھ پٹیل کی تقریر ختم ہونے کے بعد جب مغربی بنگال کی وزیر اعلی ممتا بنرجی کو تقریر کےلئے بلایا گیا تو جے شری رام کے نعرے لگنے لگے۔ اس نعرے کو سننے کے بعد منتظمین نے نعرے لگانے والوں کو خاموش کرنے کی کوشش کی مگر ممتا بنرجی نے ہندی میں تقریر کرتے ہوئے کہا کہ یہ کوئی سیاسی جماعت کا جلسہ نہیں ہے، بلکہ نیتاجی کی یاد میں حکومت ہند نے پروگرام منعقد کیا ہے، سرکاری پروگرام کا وقار ہوتا ہے ۔ممتا بنرجی نے کہا کہ ’کسی کو بلاکر ذلیل کرنا اچھی بات نہیں ہوتی۔‘ اس کے بعد ممتا بنرجی واپس بیٹھ گئیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


    next