کنبھ کو اب ’علامتی‘ ہی رکھا جائے، اس سے کورونا کی لڑائی میں طاقت ملے گی، پی ایم مودی کی سنتوں سے اپیل

پی ایم مودی نے کہا کہ آچاریہ مہامنڈلیشور آنند گری جی سے آج فون پر بات کی۔ سبھی سنتوں کی صحت کا حال دریافت کیا۔ سبھی سنت انتظامیہ سے تعاون کر رہے ہیں۔ میں نے اس کے لئے سنت برادری کا شکریہ ادا کیا۔

وزیر اعظم نریندر مودی، تصویر پی آئی بی
وزیر اعظم نریندر مودی، تصویر پی آئی بی
user

یو این آئی

نئی دہلی: ملک میں تیزی سے پھیل رہے کورونا انفیکشن کے پیش نظر وزیراعظم نریندر مودی نے سنت برادری سے ہریدوار میں چل رہے کنبھ کو علامتی رکھنے کی اپیل کی ہے۔ وزیر اعظم مودی نے سنیچر کو جونا اکھاڑہ کے آچاریہ مہما منڈلیشور سوامی اودھیش آنند گری سے فون پر بات کی۔ انہوں نے ٹوئٹ کر کے اس کی اطلاع دی۔

وزیراعظم نے ٹوئٹر پر کہا ’’اچاریہ مہا منڈلیشور سوامی اودھیش آنند گری جی سے آج فون پر بات کی۔ سبھی سنتوں کی صحت کا حال دریافت کیا۔ سبھی سنت انتظامیہ سے ہر طرح کا تعاو ن کر رہے ہیں۔ میں نے اس کے لئے سنت برادری کا شکریہ ادا کیا۔‘‘

انہوں نے ایک دیگر ٹوئٹ میں کہا کہ ’’میں نے درخواست کی ہے کہ دو شاہی اسنان ہو چکے ہیں اور اب کنبھ کو کورونا بحران کے سبب علامتی ہی رکھا جائے۔ اس سے اس بحران سے لڑائی کو ایک طاقت ملے گی‘‘۔

بعد ازاں، سوامی اودھیانند گری نے بھی ٹوئٹ کیا اور کہا ’’ہم وزیر اعظم کی اپیل کا احترام کرتے ہیں۔ زندگی کا تحفظ بڑے ثواب کا کام ہے۔ میری برادری عوام سے درخواست کرتی ہے کہ کووڈ کے حالات کو دیکھتے ہوئے بڑی تعداد میں اسنان کے لئے نہ آئیں اور ضابطوں کی پابندی کریں‘‘۔

واضح رہے کہ ہری دوار میں جاری کنبھ میں، سادھو اور سنتوں کے علاوہ لاکھوں افراد جمع ہو رہے ہیں، جس کی وجہ سے کورونا انفیکشن کے پھیلاؤ کا خطرہ کافی بڑھ گیا ہے۔ کنبھ میں کئی سادھو کورونا سے متاثر پائے گئے ہیں۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔