قومی

پی ایم مودی نے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ہٹایا ’چوکیدار‘ لفظ

این ڈی اے کی کامیابی کے بعد پی ایم مودی نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ’چوکیدار‘ لفظ ہٹا دیا اور لکھا کہ ’’چوکیدار لفظ میرے ٹوئٹر سے ہٹ گیا ہے لیکن یہ میرے دل میں ہمیشہ رہے گا۔ آپ بھی اس پر عمل کیجیے۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

عام انتخابات میں این ڈی اے کی حیران کامیابی کے بعد ایک طرف جہاں بی جے پی اور اس کی معاون پارٹیوں میں جشن کا ماحول ہے، وہیں اپوزیشن پارٹیاں اپنی شکست کو قبول کرنے کے لیے مجبور ہو رہی ہیں۔ اسی درمیان پی ایم مودی نے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ’چوکیدار‘ لفظ ہٹا دیا ہے۔ ساتھ ہی انھوں نے ان لوگوں سے بھی اپنے اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے ’چوکیدار‘ لفظ ہٹانے کی گزارش کی ہے جنھوں نے ان کی مہم میں شامل ہوتے ہوئے ’چوکیدار‘ لفظ جوڑا تھا۔

اپنے ٹوئٹ میں پی ایم مودی نے لکھا ہے کہ ’’اب وقت آ گیا ہے کہ ’چوکیدار‘ والے جذبہ کو اگلی سطح تک لے جایا جائے۔ اس جذبہ کو ہندوستان کی ترقی کے عمل میں ہمیشہ برقرار رکھیے۔‘‘ ساتھ ہی وہ لکھتے ہیں کہ ’’چوکیدار لفظ میرے ٹوئٹر سے ہٹ گیا ہے لیکن یہ میرے دل میں ہمیشہ رہے گا۔ آپ بھی اس پر عمل کیجیے۔‘‘ پی ایم نریندر مودی نے اپنے ایک دیگر ٹوئٹ میں یہ بھی لکھا کہ ہندوستان کی عوام نے چوکیدار بن کر ملک کے لیے ایک بہترین کام کیا ہے۔ چوکیدار اب ایک طاقتور سمبل بن چکا ہے۔

واضح رہے کہ کانگریس صدر راہل گاندھی کے ذریعہ ’چوکیدار چور ہے‘ نعرہ دیئے جانے کے بعد کافی منصوبہ بند طریقے سے پی ایم نریندر مودی نے ’میں بھی چوکیدار‘ مہم شروع کر دی تھی۔ اس مہم کے تحت انھوں نے جیسے ہی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر نام میں چوکیدار لفظ جوڑا، مودی کابینہ میں شامل کئی وزراء اور بی جے پی لیڈران و کارکنان نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر نام میں ’چوکیدار‘ لفظ جوڑ لیا۔ حتیٰ کہ بی جے پی قومی صدر امت شاہ، راج ناتھ سنگھ، اسمرتی ایرانی اور سشما سوراج جیسی لیڈروں نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ پر چوکیدار لفظ جوڑ لیا تھا۔ اب جب کہ پی ایم مودی نے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے چوکیدار لفظ ہٹا لیا ہے تو دھیرے دھیرے دیگر لوگوں کے درمیان بھی یہ سلسلہ شروع ہو گیا ہے۔ امت شاہ، اسمرتی ایرانی، سشما سوراج اور راج ناتھ سنگھ نے بھی اپنے ٹوئٹر اکاؤنٹ سے چوکیدار لفظ ہٹا دیا ہے۔

Published: 23 May 2019, 7:10 PM