وزیر اعظم مودی کی ’من کی بات‘: اومیکرون کو ہوشیاری، احتیاط اور نظم و ضبط کی اجتماعی طاقت سے شکست دیں

وزیر اعظم نریندر مودی نے ہم وطنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ بیداری، احتیاط اور نظم و ضبط کی اجتماعی طاقت کے ساتھ کورونا کے نئے قسم اومیکرون کو شکست دیں

من کی بات، تصویر آئی اے این ایس
من کی بات، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

نئی دہلی: وزیر اعظم نریندر مودی نے ہم وطنوں سے اپیل کی ہے کہ وہ بیداری، احتیاط اور نظم و ضبط کی اجتماعی طاقت کے ساتھ کورونا کے نئے قسم اومیکرون کو شکست دیں۔

وزیر اعظم مودی نے آل انڈیا ریڈیو پر اپنے ماہانہ پروگرام 'من کی بات' میں لوگوں سےیہ اپیل کی۔ انہوں نے کہا کہ یہ افرادی قوت کی طاقت ہے، ہر کسی کی کوشش ہے کہ ہندوستان سو سال کی سب سے بڑی وبا سے لڑ سکا۔ ہم ہر مشکل وقت میں ایک خاندان کی طرح ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے رہے۔ اپنے علاقے یا شہر میں کسی کی مدد کرنے کے لیے جو کچھ بنایا گیا تھا اس سے زیادہ کرنے کی کوشش کی۔

انہوں نے کہا کہ اگر ہم آج دنیا میں ویکسینیشن کے اعدادوشمار کا موازنہ ہندوستان کے ساتھ کریں تو لگتا ہے کہ اس ملک نے ایسا بے مثال کام کیا ہے، کتنا بڑا مقصد حاصل کیا ہے۔ ویکسین کی 140 کروڑ خوراکوں کا سنگ میل عبور کرنا ہر ہندوستانی کی کامیابی ہے۔ یہ نظام پر بھروسہ ظاہر کرتا ہے، سائنس پر اعتماد ظاہر کرتا ہے، سائنس دانوں پر بھروسہ ظاہر کرتا ہے، اور یہ ہم ہندوستانیوں کی قوت ارادی کا بھی ثبوت ہے، جو معاشرے کے تئیں اپنی ذمہ داریوں کو پورا کرتے ہیں۔


وزیر اعظم مودی نے کہا کہ لیکن ہمیں یہ بھی ذہن میں رکھنا ہوگا کہ کورونا کی ایک نئی شکل نے دستک دی ہے۔ گزشتہ دو سالوں کا ہمارا تجربہ یہ ہے کہ اس عالمی وبا کو شکست دینے کے لیے بحیثیت شہری ہماری کوشش بہت ضروری ہے۔ ہمارے سائنس دان اس نئے اومیکرون قسم کا مسلسل مطالعہ کر رہے ہیں۔ انہیں روزانہ نیا ڈیٹا مل رہا ہے، ان کی تجاویز پر کام ہو رہا ہے۔

انہوں نے کہا، ’’ایسے حالات میں، خود آگاہی، خود نظم و ضبط، ملک کے پاس کورونا کے اس قسم کے خلاف ایک بڑی طاقت ہے۔ ہماری اجتماعی طاقت کورونا کو شکست دے گی، اس ذمہ داری کے ساتھ ہمیں 2022 میں داخل ہونا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔