کورونا کے اثر کو دیکھتے ہوئے نمازِ جمعہ کی جگہ گھروں پر ہی نمازِ ظہر پڑھیں: مفتی مکرم

مفتی محمد مکرم نے اپنے ایک ویڈیو پیغام میں کہا ہے کہ ”گھروں سے باہر نہ نکلیں کیونکہ ایک تو حاکم وقت کا حکم ہے، اور دوسری طرف بیماری پھیلنے کا ڈر ہے۔ اس لیے جو ایڈوائزری دی جا رہی ہے اس پر عمل کریں۔“

Getty Images
Getty Images
user

قومی آوازبیورو

کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے پورے ہندوستان میں لاک ڈاؤن ہو گیا ہے اور اس وجہ سے ہندوستان کی بیشتر مساجد میں عام نمازیوں کا داخلہ بند کر دیا گیا ہے۔ کئی مسجدوں کے دروازے پر قفل لٹکا دیے گئے ہیں اور لوگوں سے بار بار اپیل کی جا رہی ہے کہ وہ گھروں پر ہی نماز ادا کریں۔ اس سلسلے میں فتح پوری مسجد کے شاہی امام مفتی مکرم احمد کا بھی ایک ویڈیو پیغام سامنے آیا ہے جس میں انھوں نے لوگوں سے گزارش کی ہے کہ ”اس وقت ضرورت ہے کہ لوگ اپنے گھروں میں نماز پڑھیں اور کورونا وائرس کی وجہ سے لاک ڈاؤن کی ایڈوائزری پر عمل کریں۔“

#शाही इमाम #जामामस्जिद फतेहपुरी Maulana Mufti Mukarram साहब Journalism TODAY के माध्यम से मुल्क और अलामे इस्लाम के लोगो से Corona Virus से खुद को और एक दूसरे को महफूज़ रखने की अपील करते हुए। #LockdownDay2 आप भी अपना संदेश हमें WhatsApp करिय #Coronavirus से लड़ने में देश की मदद करें अपने दोस्तों, रिश्तेदारों से घरों में रहने केलिए video संदेश भेजें,👉7982043072(WhatsApp) हमारे YouTube चैनल से जुड़ने केलिए और पूरी वीडियो देखने केलिए अभी Subscribe करिए 👇👇 http://youtube.com/c/JournalismTODAY-SAEBAN

Posted by Journalism Today on Thursday, March 26, 2020

اپنے ویڈیو پیغام میں مفتی محمد مکرم نے کہا ہے کہ "ہندوستان میں کورونا وائرس کی بیماری بہت پھیل رہی ہے اس لیے لاک ڈاؤن کیا گیا ہے اور گھروں سے نہ نکلنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ اس لیے ہم لوگ گھروں میں رہیں اور اپنی حفاظت کریں۔ اللہ تعالیٰ کا حکم ہے کہ اپنے آپ کو ہلاکت میں نہ ڈالو۔"نمازِ جمعہ کے تعلق سے ویڈیو پیغام میں وہ کہتے ہیں کہ "جمعہ کے دن بھی خاص کر جو لوگ مسجدوں میں نہ جا سکیں تو جب جمعہ کی نماز ہو چکے تو گھروں میں ظہر کی نماز پڑھ سکتے ہیں۔ یہ عذر ہے ہمارے لیے۔ ایک تو حاکم وقت کا حکم ہے کہ گھروں میں رہو، دوسری طرف بیماری پھیلنے کا ڈر ہے۔ اس لیے جو ایڈوائزری دی جا رہی ہے اس پر عمل کریں۔"

مفتی محمد مکرم لوگوں سے گھروں میں رہنے کی تاکید کرتے ہوئے مزید کہتے ہیں کہ "چونکہ شریعت میں رعایت دی گئی ہے تو ہم گھروں میں ہی نماز پڑھیں اور جمعہ کے روز بھی ظہر کی نماز آپ گھروں میں پڑھ سکتے ہیں۔ انشاء اللہ قبول ہوگی۔ اللہ سے دعا ہے کہ یہ بیماری جلد سے جلد ختم ہو جائے۔"

واضح رہے کہ آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ نے بھی کورونا وائرس کے خطرات کے پیش نظر لوگوں سے اپیل کی ہے کہ وہ باجماعت مسجدوں میں نماز ادا کرنے سے بچیں اور اپنے گھروں پر ہی عبادت کریں۔ نمازِ جمعہ کے لیے بھی مسجدوں میں جانے سے پرہیز کرنے کی بات پرسنل لاء بورڈ نے کہی ہے اور لوگوں سے گزارش کی ہے کہ وہ گھروں پر ظہر کی نماز پڑھ لیں۔ یہ سب کے لیے ضروری ہے تاکہ آپ کی وجہ سے کسی دوسرے شہری کو خطرہ نہ ہو۔

Published: 27 Mar 2020, 10:15 AM