کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے لوگ گھروں میں رہیں، احتیاط بہت ضروری: سونیا گاندھی

سونیا گاندھی نے اس بات پر مایوسی ظاہر کی کہ 130 کروڑ شہریوں والے ملک میں اب تک صرف 15701 معاملوں میں سیمپل کی جانچ ہوئی۔ ہم نے اپنے سرکاری اور نجی شعبہ کی صلاحیتوں کا پورا استعمال نہیں کیا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: کانگریس صدر سونیا گاندھی نے کورونا وائرس (کووڈ-19) سے بچاؤ کےلئے لوگوں سے گھروں میں ہی رہنے کی اپیل کرتے ہوئے وزیراعظم نریندر مودی سے اس وبا کی روک تھام کے لئے ضروری اور مناسب سہولیات مہیا کرانے کی اپیل کی ہے۔ سونیا گاندھی نے اس سلسلے میں ہفتہ کے روز ایک بیان جاری کیا جس میں انھوں نے لوگوں سے کورونا وائرس کی وبا کو پھیلنے سے روکنے کے لئے ضروری کام نہیں ہونے تک گھروں میں رہنے کی اپیل کی ہے۔

سونیا گاندھی نے جاری کردہ بیان میں کہا ہے کہ اس وبا کی وجہ سے ہندوستان ہی نہیں پوری دنیا میں غیر یقینی کی صورت حال ہے، لیکن انہوں نے یقین دلایا ہے کہ ملک کے لوگ صبر اور یقین کے ساتھ اس سنگین مسئلہ سے نمٹ لیں گے۔ کانگریس صدر نے کہا کہ "ہمیں یہ نہیں بھولنا چاہئے کہ احتیاط اور روک تھام سب سے اصل طریقہ ہے۔ میں سبھی ہندوستانیون سے اپیل کرتی ہوں کہ وہ تب تک اپنے گھروں میں رہیں جب تک ان کا باہر جانا بہت ضروری نہ ہو، گھر پر رہنا اس وائرس کے پھیلنے سے روک دے گا۔"

کانگریس صدر نے مزید کہا کہ ہمیں بیداری پیدا کرنی چاہئے کہ ہم سب بار بار ہاتھ دھوئیں، چہرے پر ہاتھ نہ پھیریں، فلو اور انفلوئزا کی علامت دکھنے پر فوری طور پر میڈیکل ہیلپ لائن یا پھر ڈاکٹر کو اطلاع دیں۔ کووڈ-19 کے خلاف لڑائی میں پوری دنیا کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے کانگریس صدر نے پی ایم مودی سے اپیل کی کہ وہ کورونا کی جانچ اور روک تھام کے لئے جانچ مرکزوں کی تعداد میں اضافہ کریں۔ انہوں کہا کہ ’’یہ بہت ضروری ہے کیونکہ 130 کروڑ شہریوں کے اس ملک میں اب تک صرف 15701 معاملوں میں ہی سیمپل کی جانچ کی گئی ہے۔ وقت پر وارننگ ملنے کے باوجود ہم نے اپنے سرکاری اور نجی شعبہ کی صلاحیتوں کا پورا استعمال نہیں کیا۔ہمیں نگرانی میں رکھے گئے سبھی لوگوں اور اس کی علامت جن لوگوں میں نظر آئے ان سبھی کی جانچ بڑے پیمانے پر کرنی چاہئے۔‘‘

Published: 21 Mar 2020, 10:45 PM