پاترا چال معاملہ: سنجے راؤت کو 22 اگست تک عدالت تحویل میں بھیجا گیا

شیو سینا کے راجیہ سبھا رکن سنجے راؤت کو 22 اگست تک عدالتی تحویل میں بھیجا گیا، تاہم عدالت نے ان کے تئیں نرم رویہ اختیار کرتے ہوئے عدالتی تحویل کے دوران ادویات اور گھر کا کھانا منگانے کی اجازت دی ہے

سنجے راؤت / ٹوئٹر / @ANI
سنجے راؤت / ٹوئٹر / @ANI
user

قومی آوازبیورو

ممبئی: شیو سینا کے راجیہ سبھا رکن سنجے راؤت کو 22 اگست تک عدالتی تحویل میں بھیجنے کا حکم صادر کیا گیا ہے۔ تاہم عدالت نے ان کے تئیں نرم رویہ اختیار کرتے ہوئے عدالتی تحویل کے دوران ادویات اور گھر کا کھانا منگانے کی اجازت دی ہے۔

دراصل، سنجے راؤت کے وکیل نے عدالت میں جو دستاویزات پیش کئے ان میں رکن پارلیمنٹ کے صحت سے متعلق کاغذات موجود تھے۔ انہی کی بنیاد پر سنجے راؤت کو گھر کا کھانا اور ادویات منگانے کی اجازت فراہم کی گئی۔ عدالت نے آرتھر روڈ جیل کے سپرنٹنڈنٹ کو سنجے راؤت کی صحت کے بارے میں معلومات فراہم کرنے کو کہا ہے تاکہ ان کے لئے انتظامات کئے جا سکیں۔


سابقہ سماعت کے دوران ای ڈی نے سنجے راؤت کے ریمانڈ میں توسیع کرنے کی درخواست کی تھی، جسے عدالت نے قبول کرتے ہوئے ریمانڈ میں 8 اگست تک توسیع کر دی تھی۔ معاملہ کی سماعت کے دوران جج نے سنجے راؤت سے پوچھا تھا کہ ان کو کوئی پریشانی تو نہیں؟ اس پر رکن پارلیمنٹ نے کہا کہ ان ہیں جہاں پر حراست میں رکھا گیا ہے وہاں ہوا کا انتظام نہیں ہے۔ اس پر عدالت نے پولیس سے جواب طلب کیا تھا۔

خیال رہے کہ مرکزی ایجنسی نے مضافاتی علاقہ گورے گاؤں میں پاترا چال کی بحالی میں مبینہ بےضابطگیوں اور ان کی اہلیہ اور مبینہ ساتھیوں کے اثاثوں سے وابستہ لین دین کے تعلق سے راؤت کو اتوار کو نصب شب گرفتار کیا گیا تھا۔ ای ڈی نے راؤت کو پیر کے روز پی ایم ایل اے عدالت کے جج ایم جی دیشپانڈے کے سامنے پیش کیا اور ان کی 8 دن کی ریمانڈ کا مطالبہ کیا تھا، تاہم عدالت نے انہیں صرف 4 اگست تک ریمانڈ پر بھیجا۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔