’پاکستان کی 70 سالوں میں واحد کامیابی، دہشت گردی‘ ہندوستان کا اقوام متحدہ میں بیان

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں مسئلہ کشمیر اٹھانے پر ہندوستان نے جمعہ کے روز پاکستان پر جوابی حملہ بولا اور کہ پاکستان کی 70 سالوں کی واحد کامیابی صرف اور صرف دہشت گردی ہے

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نیویارک: ہندوستان نے جمعہ کے روز اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میں جموں و کشمیر کا معاملہ اٹھانے والے پاکستان جوابی حملہ بولتے ہوئے کہا کہ اسلام آباد نے ایک بار پھر جھوٹ کا اعادہ کیا اور ہندوستان پر ذاتی حملے کیے۔ 70 سالوں میں دہشت گردی پاکستان کا واحد فخر ہے۔

اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل نمائندے، سفیر ٹی ایس ترومورتی نے ٹویٹ کیا، "پاکستان کے وزیر اعظم کا بیان ایک اور سفارتی زوال ہے۔ ایک اور جھوٹ کا پلندہ، ذاتی حملہ، پاکستان کے اقلیتوں پر مظالم اور سرحد پار سے ہونے والی دہشت گردی کو چھپانے کی کوشش ہے۔‘‘

اقوام متحدہ میں ہندوستان کی جانب سے سخت الفاظ میں کہا ہے، ’’مرکز کے زیر انتظام علاقہ جموں و کشمیر ہندوستقان کا اٹوٹ حصہ ہے۔ جموں و کشمیر میں لائے جانے والے قواعد و ضوابط ہندوستان کے اندرونی معاملات ہیں۔‘‘

واضح رہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 75 ویں اجلاس میں پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان نے اپنے پہلے سے ریکارڈ شدہ ویڈیو خطاب میں جموں و کشمیر سمیت ہندوستان کے اندرونی معاملات کا تذکرہ کیا تھا۔ عمران خان نے کہا، ’’پاکستان ہمیشہ پرامن طریقے سے حل تلاش کرنے کے حق میں رہا ہے۔ اس کے لئے ہندوستان کو 5 اگست 2019 سے پہلے جاری اقدامات پر دوبارہ عمل درآمد کرنا چاہئے اور جموں و کشمیر میں فوجی محاصرے اور انسانی حقوق کی دیگر پامالیوں کا خاتمہ کرنا چاہئے۔‘‘

پاکستانی وزیر اعظم کو جواب دیتے ہوئے ہندوستان کی طرف سے کہا گیا، ’’کشمیر میں اب صرف ایک تنازعہ باقی رہ گیا ہے اور وہ کشمیر کے اس حصے سے ہے جو اب بھی پاکستان کے غیر قانونی قبضے میں ہے۔ ہم پاکستان سے مطالبہ کرتے ہیں کہ وہ ان تمام علاقوں کو خالی کر دے جو غیر قانونی طور پر اس کے قبضے میں ہیں۔‘‘

واضح رہے کہ جب عمران خان کے خطاب میں ہندوستان کا ذکر آیا تو اقوام متحدہ میں ہندوستان کے مستقل مشن کے سکریٹری اول میجتو ونیتو جنرل اسمبلی ہال سے واک آؤٹ کر کے چلے گئے تھے۔

next