ہمارا بیٹا ہمارے پاس موجود، کسی ملی ٹنٹ تنظیم میں شامل نہیں ہوا، زاہد احمد کے اہل خانہ

تصویر میں زاہد احمد میر عرف زاہد بھائی بھی لکھا ہوا تھا اور ملی ٹنٹوں کی صفوں میں شمولیت کرنے کی تاریخ بھی لکھی گئی تھی جو 2 ستمبر 2020 بتائی گئی تھی۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

سری نگر: جنوبی کشمیر کے ضلع شوپیاں سے تعلق رکھنے والے ایک نوجوان کے اہل خانہ نے سوشل میڈیا کی ان خبروں کی تردید کی ہے جن کے مطابق ان کے بیٹے نے ملی ٹنٹوں کی صفوں میں شمولیت اختیار کی ہے۔ اہل خانہ کا کہنا ہے کہ ہمارا بیٹا ہمارے ساتھ بہ نفس نفیس موجود ہے انہوں نے کسی ملی ٹنٹ تنظیم میں شمولیت اختیار نہیں کی ہے۔

اپنے والد غلام حسن میر کے ساتھ زاہد احمد میر
اپنے والد غلام حسن میر کے ساتھ زاہد احمد میر

بتادیں کہ سوشل میڈیا پر زاہد احمد میر ولد غلام حسن میر ساکنہ پیر پورہ شوپیاں نامی نوجوان کی تصویر وائرل ہوئی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ انہوں نے ملی ٹنٹوں کی صفوں میں شمولیت اختیار کر لی ہے۔ تصویر میں زاہد احمد میر عرف زاہد بھائی بھی لکھا ہوا تھا اور ملی ٹنٹوں کی صفوں میں شمولیت کرنے کی تاریخ بھی لکھی گئی تھی جو 2 ستمبر 2020 بتائی گئی تھی۔

شوپیاں پولیس نے اس ضمن میں ایک ٹوئٹ میں کہا کہ 'زاہد احمد میر ولد غلام حسن ساکنہ پیر پورہ شوپیاں جس کی سوشل میڈیا پر تصویر وائرل ہوئی ہے کہ اس نے ملی ٹنٹوں کی صفوں میں شمولیت اختیار کی ہے، بے بنیاد ہے۔ اس کا اور اس کے والد کا کہنا ہے کہ وہ گھر میں اپنے خاندان کے ساتھ بہ نفس نفیس موجود ہے اور کسی ملی ٹنت تنظیم میں شمولیت اختیار نہیں کی ہے'۔ شوپیاں پولیس کے اس ٹوئٹ کو بعد میں کشمیر زون پولیس نے بھی اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر ری ٹوئٹ کیا ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next