کالجوں میں آن لائن امتحان کا متبادل دینے کے لیے این ایس یو آئی نے یو جی سی کو لکھا خط

این ایس یو آئی کے قومی صدر نیرج کندن نے مرکزی حکومت کو کٹہرے میں کھڑا کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر کے بعد بھی حکومت طلبا کی اہلیت جانچنے کا کوئی نیا طریقہ نہیں دے پائی ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

کورونا کے بڑھتے کیسز اور تیسری لہر کو دیکھتے ہوئے کانگریس کی طلبا تنظیم این ایس یو آئی نے یونیورسٹی گرانٹ کمیشن (یو جی سی) کو خط لکھ کر آف لائن کے ساتھ ساتھ آن لائن امتحان کا متبادل دینے کا مطالبہ رکھا ہے۔ این ایس یو آئی کے قومی صدر نیرج کندن نے خط میں لکھا ہے کہ کورونا کے کیسز روزانہ تیزی کے ساتھ بڑھ رہے ہیں اور بیشتر ریاستوں میں طبی خدمات کو مسائل کا سامنا ہے۔ طلبا کی ٹیکہ کاری بھی حال ہی میں شروع ہوئی ہے اور کئی اساتذہ کو دونوں خوراک نہیں لگے ہیں۔ ایسے میں طلبا کی صحت کو جوکھم میں ڈالا جانا مناسب نہیں۔

اپنے خط میں کندن نے حکومت کو کٹہرے میں کھڑا کرتے ہوئے کہا ہے کہ کورونا کی تیسری لہر کے بعد بھی حکومت طلبا کی اہلیت جانچنے کا کوئی نیا طریقہ نہیں دے پائی ہے۔ خط میں این ایس یو آئی نے مطالبہ کیا ہے کہ فروری اور مارچ میں ہونے والے امتحانات میں طلبا کی اہلیتی جانچ کے لیے نیا طریقہ اپنایا جائے جس سے ان کا سال بھی خراب نہ ہو اور آنے والے وقت میں داخلہ امتحانات پر بھی توجہ دی جا سکے۔


میڈیا سے بات چیت کے دوران نیرج کندن نے کہا کہ ہمارے پاس ملک بھر سے طلبا اور سرپرستوں کے فون، پیغامات، ای میل آئے ہیں جو آن لائن امتحان کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ حکومت کو اس جانب سنجیدگی سے غور کرنا چاہیے۔ ہم طلبا کی صحت سے کوئی سمجھوتہ نہیں کر سکتے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔