’غدارِ وطن کو کتّے کی موت ماریں گے، گھر سمیت زندہ دفنا دیں گے‘

اتر پردیش کی یوگی حکومت میں ریاستی وزیر رگھوراج سنگھ نے انتہائی متنازعہ بیان دیتے ہوئے کہا ہے کہ ’’ملک میں اب وہی بچے گا جو ہندوتوا کے خاکہ میں ٹھیک اترے گا۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

اقتدار کے غرور میں جی رہے یوگی آدتیہ ناتھ کے ریاستی وزیر رگھو راج سنگھ نے علی گڑھ میں ایک انتہائی متنازعہ بیان دیا ہے۔ انھوں نے واضح لفظوں میں کہا ہے کہ ’’غدارِ وطن افراد کتّے کی موت مارے جائیں گے۔ جو بھی ہماری قیادت کو زندہ دفنانے کی بات کرے گا، ہم اس کو گھر سمیت زندہ دفنا دیں گے۔ پولس فورس کو یہ حکم دیا گیا ہے کہ ایسے لوگوں کو فوراً انکاؤنٹر میں مار دیا جائے۔ ان لوگوں نے بہت غنڈہ گردی کر لی ہے۔‘‘

رگھو راج سنگھ نے اپنے اس متنازعہ بیان کو آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ ’’بھائیو، وقت آ گیا ہے کہ ملک میں جو ہندوتوا کے خاکہ میں رہے گا وہی اس ملک میں بچے گا۔ اگر ایسا نہیں ہوا تو وہ ہندوستان میں رہ نہیں پائے گا، ہم اس کو رہنے نہیں دیں گے۔ ہم نے طے کیا ہے کہ گولی کا جواب گولہ سے دیں گے۔‘‘ وہ مزید کہتے ہیں کہ ’’مجھے دہشت گردوں نے دھمکی دی تھی۔ میں نے ان سے کہا کہ ہندوستان میں آؤ اور آمنے سامنے کی لڑائی لڑو۔‘‘

یو پی کے ریاستی وزیر نے شرجیل امام کی گرفتاری کا تذکرہ بھی اپنی تقریر کے دوران کیا۔ انھوں نے کہا کہ ’’ایسے لوگوں کو پھانسی پر لٹکایا جائے گا۔ ہندوستان کا کھاؤ گے اور ہندوستان کی مخالفت کرو گے، ہمارے ٹیکس سے آپ زندہ رہو گے، ہندوستان کو آپ گالی دو گے، یہ ہم نہیں چلنے دیں گے۔‘‘

رگھو راج سنگھ کا یہ پہلا متنازعہ بیان نہیں ہے۔ انھوں نے اس سے پہلے اپنے ایک بیان میں کہا تھا کہ ’’مودی، یوگی کے خلاف نعرے لگانے والوں کو زندہ دفنا دوں گا۔ ملک میں مودی اور ریاست میں یوگی بیٹھا ہے۔ سوچ لو، بچو گے نہیں۔ پوٹا میں جاؤ گے، ضمانت نہیں ہوگی۔ مستقبل کے ساتھ کھلواڑ مت کرو۔‘‘

next