آج سے دہلی میں کورونا کے بڑھتے معاملوں کے پیش نظر نائٹ کرفیو نافذ

دہلی میں رات کا کرفیو لیول-1 الرٹ میں رہے گا۔ لیول 2 اور 3 میں رات کے کرفیو کے علاوہ ہفتے کے آخر میں کرفیو بھی نافذ کیا جائے گا۔ لیول 4 الرٹ شہر کے لاک ڈاؤن کی پکار پر کیا جائے گا۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

دہلی میں اب دیر رات تک نئے سال کی تقریبات نہیں منائی جا سکتیں کیونکہ دہلی میں آج سے رات کا کرفیو نافذ کر دیا گیا ہے۔دہلی حکومت نے کورونا وائرس کے بڑھتے معاملات کو دیکھتے ہوئے چھ گھنٹے کے لیے نائٹ کرفیو لگانے کا اعلان کیا ہے ۔ اس نائٹ کرفیو کا اطلاق آج رات 11 بجے سے صبح 5 بجے تک ہوگا۔ واضح رہے دہلی میں اتوار کو کورونا انفیکشن کی شرح 0.5 فیصد سے تجاوز کر گئی، جو کہ قومی دارالحکومت دہلی کے لیے مقرر کورونا گریڈڈ ریسپانس ایکشن پلان (گریپ) کے یلو زون کے تحت آتی ہے۔

افسران نے بتایا کہ رات کا کرفیو رات 11 بجے سے صبح 5 بجے تک نافذ رہے گا۔ واضح رہے کہ یو این آئی نے ہفتہ کو اپنی رپورٹ میں کہا تھا کہ دہلی میں رات کا کرفیو نافذ کرنے پر غور کیا جا رہا ہے۔یہ فیصلہ ریاستی حکومت کے کووڈ گریپ کے پہلے درجے میں داخل ہونے کے بعد لیا گیا ہے۔ گریپ میں کووڈ۔19 کی صورتحال کی سنگینی کی بنیاد پر رات کے کرفیو سے لے کر مکمل لاک ڈاؤن تک کے اقدامات کو نافذ کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔


قومی راجدھانی میں اتوار کو کورونا کے 290 نئے کیس سامنے آئے اور اس کی وجہ سے ایک مریض کی موت ہوئی، جب کہ پازیٹی وٹی کی شرح 0.55 فیصد ریکارڈ کی گئی۔ دہلی میں 18 دسمبر سے 26 دسمبر کے درمیان کورونا کے 1348 نئے کیسز رجسٹرڈ ہوئے، جب کہ کیس کی پازیٹی وٹی کی شرح 0.13 فیصد (18 دسمبر) سے بڑھ کر 26 دسمبر کو 0.55 فیصد ہوگئی۔

قومی راجدھانی میں پازیٹیو معاملات میں روزانہ اضافہ کورونا کے اومیکرون ویرینٹ کے معاملے سامنے آنے کے بعد ہوا ہے۔ اتوار کی صبح تک، دہلی میں اومیکرون کے 79 کیس رپورٹ ہوئے، جن میں سے 23 کو صحت یاب ہونے کے بعد ہسپتال سے چھٹی دے دی گئی۔


دہلی ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی (ڈی ڈی ایم اے) کے رہنما خطوط کے مطابق، انفیکشن کے پھیلاؤ کی بنیاد پر کووڈ 19 کی صورتحال کو گریپ کے چار درجوں میں درجہ بندی کی گئی ہے۔گریپ کے مطابق، لیول-1 (یلو) تب جاری کیا جاتا ہے جب مسلسل دو دنوں تک پازیٹی وٹی کی شرح 0.5 فیصد سے تجاوز کر جاتی ہے۔ ایک ہفتے میں 1500 نئے کیسز رجسٹر ہوتے ہیں اور 500 مریضوں کو آکسیجن بیڈز کی ضرورت ہوتی ہے۔

لیول-2 (امبر) جاری کیا جاتا ہے جب مثبت معاملوں کی کی شرح مسلسل دو دنوں تک 1 فیصد سے زیادہ ہو جاتی ہے۔ ایک ہفتے کے اندر، 3500 نئے کووڈ 19 کیسز رجسٹرڈ کئے جاتے ہیں اور 700 آکسیجن بیڈز بھر جاتے ہیں۔


لیول-3 (اورنج) اس وقت جاری کیا جاتا ہے جب لگاتار دو دنوں تک پازیٹی وٹی کی شرح 2 فیصد سے زیادہ ہو۔ اس کے علاوہ ایک ہفتے میں نئے کیسز کی تعداد 9000 ہونی چاہیے جس میں 1000 مریضوں کو آکسیجن بیڈز کی ضرورت ہوگی۔

لیول 4 (ریڈ) اس وقت جاری کیا جاتا ہے جب لگاتار دو دن تک پازیٹی وٹی کی شرح 5 فیصد سے زیادہ ہوتی ہے، ایک ہفتے میں 16000 سے زیادہ نئے کووڈ۔ 19 کیسز رپورٹ ہوتے ہیں اور 3000 مریض آکسیجن بیڈ پر بھرتی ہوتے ہیں۔


دہلی میں رات کا کرفیو لیول-1 الرٹ میں رہے گا۔ لیول 2 اور 3 میں رات کے کرفیو کے علاوہ ہفتے کے آخر میں کرفیو بھی نافذ کیا جائے گا۔ لیول 4 الرٹ شہر کے لاک ڈاؤن کی پکار پر کیا جائے گا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔