امِ ماریہ حق کی نظم: انقلاب کے دئیے

اس شہرِ بے اماں کے ستم کشا لوگ، اٹھ کھڑے ہوئے، یہ لوگ وہ ہیں، کہ جن کے چہرے پر جبر کی داستان لکھی گئی ہے...

علامتی تصویر
علامتی تصویر
user

ام ماریہ حق

اس شہرِ بے اماں کے ستم کشا لوگ

اٹھ کھڑے ہوئے

یہ لوگ وہ ہیں

کہ جن کے چہرے پر جبر کی داستان لکھی گئی ہے

انصاف سے جن کا ایمان اٹھ چکا ہے

سیاست کے پیچ وخم سے

پرخار کردی گئی ہیں

جن کی راہیں

وہ آج کھڑے ہیں سڑکوں پر

ظلم کی ہرقوت سے ٹکرانے

سیاست کے اس سیاہ دور میں

انقلاب کے دئیے جلانے

~ امِ ماریہ حق

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


    next