حیدر آباد میں دلت ریزرویشن تحفظ کمیٹی کے صدر کی زبردست پٹائی، ویڈیو وائرل

ایک پریس کانفرنس کے دوران دلت ریزرویشن تحفظ کمیٹی کے صدر شری شیلم تلنگانہ میں ’گروکُل‘ اور سماجی فلاح کے رہائشی اسکولوں میں چل رہی بے ضابطگیوں پر اپنی رائے ظاہر کر رہے تھے جب ان پر حملہ ہوا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

منگل کو حیدر آباد کے پریس کلب میں ایک پریس کانفرنس کے دوران قومی دلت ریزرویشن تحفظ کمیٹی کے صدر شری شیلم پر حملہ کیا گیا۔ حیدر آباد واقع عثمانیہ یونیورسٹی کے اسکالر پی الیکزنڈر اور ان کے ساتھیوں پر حملے کا الزام عائد کیا گیا ہے۔ پولس نے ان کے خلاف شکایت درج کر معاملے کی جانچ شروع کر دی ہے۔

دراصل ایک پریس کانفرنس کے دوران شری شیلم تلنگانہ میں ’گرو کُل‘ اور سماجی فلاح کے رہائشی اسکولوں میں چل رہی بے ضابطگیوں کو لے کر اپنا نظریہ رکھ رہے تھے۔ تبھی اچانک عثمانیہ یونیورسٹی کے اسکالر پی الیکزنڈر اور ان کے ساتھیوں نے بغیر کچھ کہے اور سنے اچانک ان پر حملہ کر دیا۔ معاملے کو بڑھتا دیکھ شری شیلم کے معاونین انھیں باہر کی طرف لے جانے لگے، لیکن باہر پہنچنے تک بھی ان پر کئی بار حملے ہوئے۔

قابل غور ہے کہ کارنے شری شیلم قومی دلت ریزرویشن تحفظ کمیٹی کے صدر ہیں اور حیدر آباد و باقی ریاستوں میں دلت طبقہ کے لوگوں پر ہو رہے مظالم کے خلاف ایک مہم چلا رہے تھے۔ اسی سلسلے میں وہ منگل کے روز ایک پریس کانفرنس کر رہے تھے کہ اچانک کچھ سماج دشمن عناصر کے ذریعہ انھیں بری طرح سے پیٹا گیا۔

دلتوں کے حقوق کے لیے چلائی جا رہی کارنے شری شیلم کی اس مہم کی کچھ مقامی لوگ زبردست مخالفت کرتے ہیں۔ لیکن شری شیلم اس کی پروا کیے بغیر اپنی مہم میں لگے ہوئے ہیں۔ لیکن جس طرح سے پریس کلب کے اندر گھس کر سماج دشمن عناصر نے ان کی پٹائی کی، اس سے پریس کلب کی سیکورٹی پر ایک بڑا سوال کھڑا ہو گیا ہے۔

next