پی ڈی پی لیڈران کو میٹنگ میں شرکت کرنے سے روکنا آئین کے منافی: نیشنل کانفرنس

نیشنل کانفرنس نے کہا کہ انتظامیہ کو سیاسی جماعتوں کے اجلاسوں کے انعقاد کو روکنے کا کوئی حق نہیں اور مستقبل میں ایسے اقدامات سے گریز کیا جانا چاہئے۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

جموں و کشمیر نیشنل کانفرنس نے انتظامیہ کی طرف سے پی ڈی پی کی پارٹی میٹنگ پر قدغن لگانے کے اقدام کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایسے اقدامات جمہوریت، آئین اور قانونی کے منافی ہیں۔ پارٹی کے ترجمان عمران نبی ڈار نے اپنے ایک بیان میں پی ڈی پی کے اجلاس میں شرکت کرنے سے روکنے کے لئے پولیس کی طرف سے پارٹی لیڈران کو بند کرنے کے اقدام کو ناقابل قبول قرار دیا اور کہا کہ ایسے اقدامات تاناشاہی اور لاقانونیت کی عکاسی کرتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ انتظامیہ اور پولیس نے نیشنل کانفرنس کے اجلاسوں پر بھی ایسی غیر قانونی پابندی عائد کی تھی اور لیڈران کو بلا جواز طور پر نظربند رکھا تھا لیکن ہماری جماعت نے اس ناانصافی کے خلاف عدالت عالیہ کا دروازہ کھٹکھٹایا اور بالآخر انتظامیہ کو عدالت عالیہ کے سامنے جوابدہ ہونا پڑا اور نیشنل کانفرنس کی لیڈرشپ پر غیر قانونی اور بلا جواز قدغنیں ختم ہوگئیں۔

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی

این سی ترجمان نے کہا کہ انتظامیہ کو سیاسی جماعتوں کے اجلاسوں کے انعقاد کو روکنے کا کوئی حق نہیں اور مستقبل میں ایسے اقدامات سے گریز کیا جانا چاہئے۔ انہوں نے کہا کہ نیشنل کانفرنس تمام سیاسی قیدیوں کی رہائی کا مطالبہ کرتی ہے اور کسی بھی فرد کی انفرادی آزادی پر کسی بھی قسم کی قدغن نہیں ہونی چاہئے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


Published: 04 Sep 2020, 7:40 AM
next