وزیر اعظم مودی نے ملک کے مفاد میں زرعی قانون واپس لئے: بی جے پی

بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ملک کے مفاد میں زرعی قوانین کو واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے

سنگھو بارڈر / قومی آواز / وپن
سنگھو بارڈر / قومی آواز / وپن
user

یو این آئی

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) نے کہا ہے کہ وزیر اعظم نریندر مودی نے ملک کے مفاد میں زرعی قوانین کو واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

بی جے پی کسان مورچہ کے صدر راجکمار چاہر نے یو این آئی سے بات کرتے ہوئے کہا کہ مسٹر مودی نے یقینی طور پر کسانوں کے مفادات کو مدنظر رکھتے ہوئے زرعی قوانین کو واپس لینے کا فیصلہ کیا ہے۔

واضح رہے کہ قومی راجدھانی کی سرحدوں پر کسان تقریباً ایک سال سے احتجاج کر رہے ہیں، جس کی وجہ سے حکومت نے تینوں نئے زرعی قوانین کو واپس لے لیا ہے۔ وزیر اعظم نے آج ملک سے اپنے خطاب میں یہ بڑا اعلان کیا۔ مسٹر مودی نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت تینوں زرعی قوانین اچھی نیت سے لائی ہے، لیکن ہم یہ بات کسانوں کو سمجھا نہیں کر سکے۔


تین نئے زرعی قوانین کو منظوری گزشتہ سال ستمبر میں پارلیمنٹ نے دی تھی۔ اس کے بعد صدر رام ناتھ کووند نے تینوں قوانین کی تجویز پر دستخط کئے۔ تب سے کسانوں کی تنظیموں نے زرعی قوانین کے خلاف تحریک شروع کی ہوئی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔