مودی نے بی جے پی کو ’دو لوگوں‘ کی پارٹی بنا دیا: کمل ناتھ

کمل ناتھ نے ٹوئٹ کے ذریعے کہا کہ ہماری پارٹی آج بھی سبھی آنجہانی اور سینئر لیڈروں کا احترام کرتی ہے، ہم نے انہیں کبھی نہیں بھلایا لیکن آپ نے (مودی) تو اپنی پارٹی کو ’ٹو مین‘ پارٹی بنا دیا ہے۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

بھوپال: مدھیہ پردیش کے وزیر اعلی کمل ناتھ نے وزیر اعظم نریندر مودی کی نکتہ چینی کرتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں واضح کرنا چاہیے کہ آنجہانی اٹل بہاری واجپئی کے علاوہ سینئر بی جے پی لیڈر لال کرشن اڈوانی اور مرلی منوهر جوشی جیسے لیڈروں کو انہوں نے بھلا دیا ہے یا گھر بیٹھا دیا ہے۔

کمل ناتھ نے ٹوئٹ کے ذریعے کہا کہ ہماری پارٹی آج بھی سبھی آنجہانی اور سینئر لیڈروں کا احترام کرتی ہے، ہم نے انہیں کبھی نہیں بھلایا لیکن آپ نے (مودی) تو اپنی پارٹی کو ’ٹو مین‘ پارٹی بنا دیا ہے۔

کمل ناتھ نے نریندر مودی سے مخاطب ہوتے ہوئے لکھا ہے کہ آنجہانی راجیو گاندھی نے ملک کے لئے شہادت دی ہے، ملک کی تعمیر و ترقی میں ان کا اہم تعاون ہے۔ ہم ہمیشہ ان کے نام اور ان کی خدمات کی بنیاد پر ہی الیکشن لڑتے ہیں۔ لیکن کیا آپ کی پارٹی میں ایک بھی ایسا لیڈر ہے جس نے ملک کے لئے شہادت دی ہو، جس کے نام پر آپ کی پارٹی الیکشن لڑ سکتی ہو۔

واضح رہے کہ نریندر مودی نے سابق وزیر اعظم راجیو گاندھی کے متعلق بیان دیا اور کانگریس کو چیلنج کیا ہے۔ کمل ناتھ کے ٹوئٹس اسی تناظر میں دیکھے جا رہے ہیں۔ پیر کے روز وزیر اعظم مودی نے جھارکھنڈ ریلی سے خطاب کرتے ہوئے حزب اختلاف پر نشانہ لگایا تھا اور کہا تھا کہ وہ راہل گاندھی کو چیلنج کرتے ہیں کہ بقیہ الیکشن راجیو گاندھی کے نام پر لڑ کر دکھائیں۔