مودی حکومت آئینی اداروں کو اپوزیشن کے خلاف استعمال کر رہی: ادت راج

ادت راج نے ججوں کی تقرریوں سے متعلق طریقہ پر کہا کہ ان حالات میں انصاف نہیں مل سکتا۔ حالانکہ بعد میں انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ ان کا ذاتی بیان ہے اور اس سلسلے میں پارلیمنٹ میں بھی بول چکے ہیں۔

ادت راج، تصویر آئی اے این ایس
ادت راج، تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

لکھنؤ: کانگریس لیڈر ادت راج نے کانگریس ریاستی دفتر پر منعقد کسان مہاپنچایت سے خطاب کرتے ہوئے حکومت پر الزام لگایا کہ وہ سی بی آئی اور ای ڈی سمیت مرکزی ایجنسیوں کے ذریعہ اپوزیشن کی آواز دبا رہی ہے۔ اپنے خطاب کے دوران انہوں نے ججوں کی تقرریوں پر قابل اعتراض تبصرہ کرتے ہوئے کہا کہ ان حالات میں انصاف نہیں مل سکتا۔ حالانکہ بعد میں انہوں نے یہ بھی کہا کہ یہ میرا ذاتی بیان ہے اور میں اس پر پارلیمنٹ میں بول چکا ہوں۔

مہا پنچایت میں ادت راج نے راہل گاندھی کو سمجھدار لیڈر بتاتے ہوئے کہا کہ کورونا کے سلسلے میں انہوں نے پہلے ہی انتباہ دیا تھا اور پرائیویٹائزیشن پر سوال اٹھائے تھے۔ انہوں نے کہا کہ راہل گاندھی نے کسانوں کی لڑائی لڑ رہے ہیں جبکہ ایس پی و بی ایس پی خاموش ہیں۔

کانگریس لیڈر پرمود تیواری نے کہا کہ جب کسانوں کے آگے انگریزوں کو جھکنا پڑا تو بی جے پی حکومت کی کیا بساط ہے۔ اسی طرح کے قانون انگریز بھی اپنے اقتدار میں لے کر آئے تھے لیکن کسانوں کی سخت مخالفت کے بعد انہیں پیچھے ہٹنا پڑا۔ مہاپنچایت میں ایم ایل سی دیپک سنگھ نے زرعی قوانین کے خلاف فیصلہ کن لڑائی لڑی جائے گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


next