کورونا مشتبہ مریض کی خبر دینے والے شخص کا پیٹ پیٹ کر قتل، 7 افراد گرفتار

مہاراشٹر سے لوٹے دو لوگوں میں کورونا وائرس انفیکشن کا اندیشہ ہونے کے بعد ببلو نامی شخص نے یہ خبر محکمہ صحت کو دے دی۔ اس بات سے ناراض دونوں مشتبہ افراد نے ببلو کی ایسی پٹائی کی کہ اس کا انتقال ہو گیا۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

ایک طرف کورونا کے مشتبہ افراد کی جانکاری دینے کے لیے مرکزی اور ریاستی حکومتیں لوگوں کے درمیان بیداری پھیلا رہی ہیں، دوسری طرف بہار سے ایسی خبر آ رہی ہے کہ ایک شخص نے انتظامیہ کو کورونا کے دو مشتبہ مریضوں کی اطلاع دی جس کے بعد کچھ لوگوں نے خبر دینے والے شخص کا ہی پیٹ پیٹ کر قتل کر دیا۔ واقعہ بہار کے سیتامڑھی ضلع کا بتایا جا رہا ہے۔

دراصل مہاراشٹر سے دو لوگ سیتامڑھی کے رونی سیدپور واقع مدھول اپنے گاؤں پہنچے تھے۔ ان کے مہاراشٹر سے لوٹنے کی جانکاری گاؤں کے ہی ببلو نامی ایک شخص نے محکمہ صحت کو دے دی۔ ببلو نے مہاراشٹر سے لوٹے دونوں افراد میں کورونا وائرس انفیکشن کا اندیشہ ہونے کے بعد ہی ہیلپ سنٹر کو فون کر کے اس کی جانکاری دی تھی۔ بعد ازاں محکمہ صحت کی ٹیم نے دونوں مشتبہ افراد کا سیمپل لیا اور انھیں کوارنٹائن میں رہنے کی ہدایت دے کر چلے گئے۔

محکمہ صحت کی ٹیم کے جانے کے بعد مہاراشٹر سے لوٹے دونوں افراد نے ببلو پر ناراضگی ظاہر کی اور اس قدر غصہ ہوئے کہ اس کی زبردست پٹائی کر دی۔ بتایا جاتا ہے کہ ببلو اس درمیان لاکھ منتیں کرتا رہا کہ اسے چھوڑ دیا جائے، لیکن انھوں نے ایک نہیں سنی۔ اس پٹائی کی وجہ سے ببلو کی جان چلی گئی اور پھر کچھ لوگوں نے اس کی جانکاری پولس کو دے دی۔ خبر ملتے ہی پولس موقع پر پہنچی اور 7 لوگوں کو گرفتار کر لیا۔