ممتا بنرجی کا بڑا اعلان، ریاستی کسانوں کو ہر سال 10 ہزار روپے دے گی حکومت

’کرشک بانڈو‘ منصوبے کے تحت ریاست کے کسانوں کو پہلے ہر سال پانچ ہزار روپے مل رہے تھے ، جسے بڑھا کر 10 ہزار روپے کر دیا گیا ہے۔ پہلے دن ہی 9.79لاکھ کسانوں کو 290 کروڑ روپے دیئے گئے تھے۔

ممتا بنرجی، تصویر یو این آئی
ممتا بنرجی، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

کولکاتا: اسمبلی انتخابات سے قبل کسانوں سے کئے گئے وعدے کو پورا کرتے ہوئے وزیر اعلی ممتا بنرجی نے جمعرات کو ’کرشک بانڈو‘ منصوبے کا اعلان کیا ہے۔ اس کے تحت ریاست کے کسانوں کو ہر سال 10 ہزار روپے کی مالی امداد دی جائے گی۔ ریاست کے 60 لاکھ کسان اس سے مستفید ہوں گے۔

ریاستی سکریٹریٹ میں میڈیا سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعلی ممتا بنرجی نے کہا کہ یہ فیصلہ ریاست کے کسانوں کے مفاد میں لیا گیا ہے۔ کچھ دن پہلے ہی کابینہ کے اجلاس میں اس منصوبے کی منظوری دی گئی تھی ، جسے آج بالآخر عملی شکل دے دی گئی ہے۔ اس منصوبے کے تحت ریاست کے کسانوں کو پہلے ہر سال پانچ ہزار روپے مل رہے تھے ، جسے بڑھا کر 10 ہزار کردیئے گئے ہیں۔ پہلے دن ہی 9.79لاکھ کسانوں کو 290 کروڑ روپے دیئے گئے تھے۔

ممتا بنرجی نے کہا کہ ’’ہم یہ رقم 60 لاکھ کسانوں کو دیں گے۔ مرکزی حکومت سب کو پیسہ نہیں دے رہی ہے اور کم رقم دے رہی ہے۔‘‘ وزیر اعلی ممتا بنرجی نے ایک بار پھر مرکزی حکومت پر مالی مدد فراہم نہیں کرنے کا الزام عائد کرتے ہوئے کہا کہ طوفان یاس سے ہونے والے نقصان کے مطابق ابھی تک مرکزی حکومت سے موصول نہیں ہوئی ہے۔

ممتا بنرجی نے کہا کہ یہ اسکیم آج سے شروع ہوچکی ہے اور جلد ہی یہ رقم تمام کسانوں کو منتقل کردیا جائے گا۔زراعت ہمارا وسیلہ ہے۔ اس لئے میں ان کے کنبہ کا احترام کرتی ہوں۔ یہ ایک بہت بڑا منصوبہ ہے۔ ملک میں پہلی بار ، بنگال کے کسانوں کو سالانہ اتنی بڑی رقم دی جائے گی ۔ کسان کی موت پر مالی امداد دی جاتی ہے۔ کرشک بانڈو یوجنا کے تحت پہلے ہی 4500 کروڑ روپئے کا فائدہ دیا جا چکا ہے۔ انہوں نے دعوی کیا کہ کسانوں کی آمدنی تین گنا سے بھی زیادہ اضافہ ہوا ہے اور آنے والے وقت میں آمدنی میں مزید اضافہ ہوگا ۔ بنگال میں کسان کی موت کی صورت میں معاوضہ ، حکومت بنگال میں فصلوں کے انشورنس کی ادائیگی کررہی ہے۔ یش سے متاثرہ کسانوں کی رقم پانچ سے چھ ہفتوں میں بینک کو ارسال کردی جائے گی۔

ترنمول کانگریس نے اپنے انتخابی منشور میں کرشک بانڈو اسکیم کے تحت کسانوں کو سالانہ امداد بڑھانے کا وعدہ کیا تھا۔ بنگال میں بھاری اکثریت سے تیسری بار اقتدار میں آنے والی ممتا بنرجی نے یہ وعدہ پورا کیا۔ اس فیصلے سے لگ بھگ 60 لاکھ چھوٹے اور معمولی کسان مستفید ہوں گے۔ یہ اسکیم 2018 میں شروع کی گئی تھی۔ یہ اسکیم مغربی بنگال کے کسانوں کو مالی مدد فراہم کرنے کے لئے شروع کی گئی تھی۔ اس کے تحت ، ریاستی حکومت کسان خاندان کے کسی ممبر کی موت پر 2 لاکھ روپے معاوضہ دیتی ہے۔ اس اسکیم سے فائدہ اٹھانے کے لئے کسانوں کو کرشک بانڈو پورٹل پر اندراج کرنا ہوگا۔ منظوری کے بعد ، رقم کاشتکار کے بینک اکاؤنٹ میں ڈائریکٹ بینیفٹ ٹرانسفر (ڈی بی ٹی) اسکیم کے تحت دو قسطوں میں بھیج دی جاتی ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔