تحقیقاتی صحافت کا فقدان تشویشناک: چیف جسٹس رمنا

ہندوستان کے چیف جسٹس این وی رمنا نے تحقیقاتی صحافت کے فقدان پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ بدقسمتی سے یہ میڈیا سے غائب ہو رہی ہے

چیف جسٹس این وی رمنا
چیف جسٹس این وی رمنا
user

یو این آئی

نئی دہلی: ہندوستان کے چیف جسٹس این وی رمنا نے تحقیقاتی صحافت کے فقدان پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ بدقسمتی سے یہ میڈیا سے غائب ہو رہی ہے۔

چیف جسٹس رمنا نے سینئر صحافی سدھاکر ریڈی اڈومولا کی تحریر کردہ کتاب ’بلڈ سینڈرس: دی گریڈ فاریسٹ ہیسٹ‘ کے اجرا کے موقع پر صحافت کے سلسلہ میں بابائے قوم مہاتما گاندھی کو یاد کیا۔ جسٹس رمنا نے مہاتما گاندھی کی کئی مثالوں کا ذکر کیا۔ انہوں نے کہا کہ اخبارات کو سچ کے تحقیقات کے لئے پڑھا جانا چاہئے اور انہیں آزاد سوچ کی عادت کو ختم کرنے کی اجازت قطعی نہیں دی جانی چاہئے۔


انہوں نے کہا کہ مجھے امید ہے کہ میڈیا مہاتما گاندھی کے ان خیالات کی روشنی میں خود احتسابی سے کام لے گی۔ عدالت عظمی کے چیف جسٹس نے جنگلاتی ماحولیاتی نظام کے تحفظ پر مبنی اس کتاب کے لئے اس کے مصنف اڈومولا کی تعریف کی اور صلاح دیتے ہوئے کہاکہ اگر اس کوشش میں مقامی لوگ بھی شامل ہوجائیں تو ایک بڑی تبدیلی آئے گی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔