کیرالہ میں تودہ کھسکنے سے 13 افراد کی موت، 85 لاپتہ، وزیر اعظم کا اظہار رنج و غم

کیرالہ میں ایڈُکی ضلع کے راجمالہ میں جمعہ کو شدید بارش ہونے کے سبب تودہ کھسکنے سے کم سے کم 13 افراد کی موت ہو گئی اور دیگر 85 افراد لاپتہ ہو گئے

تصویر یو این آئی
تصویر یو این آئی
user

قومی آوازبیورو

ایڈُکی: کیرالہ میں ایڈُکی ضلع کے راجمالہ میں جمعہ کو شدید بارش ہونے کے سبب تودہ کھسکنے سے کم سے کم 10 افراد کی موت ہو گئی اور دیگر 85 افراد لاپتہ ہو گئے۔ اس دوران 16 افراد کو بچا لیا گیا۔ ذرائع نے بتایا کہ جمعرات کی رات سے علاقے میں شدید بارش ہو رہی ہے جس کے سبب مُنار میں راجمالہ کے پیٹیمُڈی میں علی الصباح تقریباً چار بجے تودہ کھسکنے کا یہ واقعہ ہوا۔ جائے وقوعہ سے 10 لاش برآمد کی گئی ہیں جبکہ 16 افراد کو بچا لیا گیا ہے جن میں سے چار افراد کی حالت سنگین ہے۔ بچائے گئے لوگوں کو یہاں کے کنَّن دیون اسپتال میں داخل کروایا گیا ہے۔ اس علاقے سے دیگر علاقوں کا رابطہ کم ہونے کے سبب واقعہ کے بارے میں کئی گھنٹوں بعد صبح پتہ چل سکا۔

نیشنل ڈیزاسٹر رسپونس فورس (این ڈی آر ایف) کی ٹیم موقع پر پہنچ گئی ہے اور راحت رسانی کا کام شروع کر دیا۔ ایک افسر سے یو این آئی کو بتایا کہ راحت اور بچاؤ مہم کے تحت عوام کو طیارے کے ذریعے نکالنے کی کوششیں بھی موسم خراب ہونے کے سبب فی الحال کامیاب نہیں ہو پا رہی ہیں۔ پڑوسی ضلع کے اسپتالوں سے کہا گیا ہے کہ وہ کسی بھی ہنگامی صورتحال سے نمٹنے کے لیے تیار رہیں۔

شروعاتی گھنٹوں میں پولیس یا محکمہ محصولات کے افسر جائے وقوعہ تک نہیں پہنچ پائے تھے کیونکہ گذشتہ رات کو علاقے کو جوڑنے والا پیریاورم پل سیلاب سے تباہ ہو گیا تھا۔ مُنَّار سے تقریباً 30 کلومیٹر دور یہ تودہ کھسکا لیکن علاقے کے خراب بنیادی ڈھانچے کے سبب بچاؤ مہم میں تاخیر ہوئی۔ اس علاقے کے ایراویکُلم نیشنل پارک کا حصہ ہونے کے سبب ترقیاتی کام کافی کم ہوئے ہیں۔ تودہ کھسکنے سے بڑی تعداد میں لوگوں کے دبنے کا اندیشہ ہے جن میں سے زیادہ تر کَنَّن دیو گن باغان کے مزدور ہیں جو وہاں 20 گھروں میں رہتے تھے۔

وزیراعظم نریندرمودی نے کیرالہ میں تودہ گرنے سے 13 افراد کی موت پر شدید رنج وغم کا اظہار کیا ہے اور ہلاک ہونے والوں کے اہل خانہ کو دو دو لاکھ روپےبطور ایکس گریشیا دینے کا اعلان کیا ہے۔ مودی نے اپنے ٹویٹ پیغام میں لکھا، ’’اڈوکی میں تودہ گرنے کے سبب لوگوں کی موت سے دکھی ہوں۔غم کی اس گھڑی میں متاثرہ خاندان کے ساتھ میری تعزیت۔زخمیوں کی جلد شفایابی کی دعا کرتا ہوں۔این ڈی آر ایف اور انتظامیہ متاثرہ افراد کی مدد میں مصروف ہیں۔

ایک دیگر ٹویٹ میں انہوں نے لکھا ہے،’’متاثرہ خاندان کو وزیراعظم راحت فنڈ سے دودولاکھ روپے بطور ایکس گریشیاجبکہ زخمیوں میں سے ہرایک کو 50-50ہزار روپے کی مدد مہیا کی جائے گی۔ قابل ذکر ہے کہ جمعہ کو شدید بارش کے سبب ہوئے لینڈ سلائیڈنگ سے کم از کم 13 افراد کی موت ہوگئی اور تقریباً 66 دیگر لاپتہ ہوگئے۔

    next