کورونا کے مدنظر ہندوستانی سرحدیں بند، کرتارپور گرودوارہ کی یاترا بھی ملتوی

حکومت نے کورونا وائرس کے مدنظر نیپال، بھوٹان، بنگلہ دیش اور میانمار کے لیے سڑک کے راستہ آمدورفت پر پابندی لگا دی ہے۔ ان ملکوں کے لیے سٹرک سے آمدورفت پر 15مارچ سے اگلے احکامات تک بند کردی گئی ہیں۔

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

یو این آئی

نئی دہلی: کورونا وائرس کے مدنظر پاکستان میں واقع کرتارپور گرودوارہ کے لیے عقیدت مندوں کی یاترا اور رجسٹریشن کو آج نصف شب کے بعد احتیاطاً عارضی طور پر ملتوی کردیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ کے ترجمان کے مطابق کورونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے اور اس پر قابو پانے کے مقصد سے احتیاط کے طور پر مذہبی یاترا پر 16مارچ سے روک لگا دی گئی ہے۔ یہ روک اگلے احکامات تک کے لیے لگائی گئی ہے۔

حکومت نے کورونا وائرس کے مدنظر نیپال، بھوٹان، بنگلہ دیش اور میانمار کے لیے سڑک کے راستہ آمدورفت پر پابندی لگا دی ہے۔ ان ملکوں کے لیے سٹرک سے آمدورفت پر 15مارچ سے اگلے احکامات تک بند کردی گئی ہیں۔

ہندستان اور بنگلہ دیش کے درمیان چلنے والی مسافر ٹرینوں کی آمدورفت بھی 15مارچ سے 15اپریل یا اگلے احکامات تک روک دی گئی ہے۔ نیپال اور بھوٹان کی سرحد پرآمدورفت دونوں ملکوں کے شہریوں کے لیے نہیں، تیسرے ملک کے شہریوں کے لیے ممنوع رہے گی۔

وزارت نے کہا کہ سرحدوں پر لگنے والے ہاٹ کو بھی اگلے احکامات تک بند کر دیا گیا ہے۔ ان ہاٹ بازاروں میں سرحد سے جڑے دونوں ملکوں کے لوگ آتے جاتے ہیں۔