کرناٹک: کھیتوں سے ٹماٹر کی چوری نے کسانوں کو کیا پریشان، شب و روز کھیت میں گشت لگانے کو ہوئے مجبور

ٹماٹر کی قیمت آسمان چھونے کی وجہ سے اب چوروں کی نظر بھی اس کی طرف پڑ گئی ہے، کرناٹک میں ان دنوں کھیتوں سے ٹماٹر چوری کے معاملے بڑھ گئے ہیں جس سے کسانوں کی مشکلات میں اضافہ ہوا ہے۔

ٹماتڑ، تصویر آئی اے این ایس
ٹماتڑ، تصویر آئی اے این ایس
user

قومی آوازبیورو

ٹماٹر کی قیمت اس وقت آسمان چھو رہی ہے۔ باورچی خانہ میں اس کا استعمال کم سے کم کر دیا گیا ہے اور سبزی فروشوں کے پاس بھی کم مقدار میں ہی ٹماٹر دکھائی پڑ رہے ہیں۔ اس درمیان کرناٹک میں کھیتوں سے ٹماٹر چوری ہونے کے کئی واقعات سامنے آئے ہیں جس سے کسان طبقہ فکر مند ہے۔ ٹماٹر کی بڑھی ہوئی قیمت کی وجہ سے چوروں کی نظر بھی اس کی طرف پڑ گئی ہے اور ٹماٹر چوری کے معاملے گزشتہ کچھ دنوں میں بڑھ گئے ہیں۔ کرناٹک میں کھیتوں سے بار بار ٹماٹر چوری ہونے کے بعد کسان اب پورے کنبہ کے ساتھ تیار ٹماٹر کی فصل کی نگرانی میں لگ گئے ہیں۔

بتایا جا رہا ہے کہ کچھ کھیتوں میں خواتین سمیت پورا کسان کنبہ ہاتھوں میں لاٹھی لے رکھوالی کرتا ہے تاکہ جلد پیسہ کمانے کے لیے فصل کو نشانہ بنا رہے بدمعاشوں سے نمٹا جا سکے۔ گزشتہ ہفتہ ڈوڈابلاپورہ تعلقہ کے لکشمی دیوی پورہ گاؤں میں جگدیش اور ششی کلا (میاں بیوی) کے کھیت کو بدمعاشوں نے دو بار نشانہ بنایا۔ چوروں کے ہاتھوں انھیں ڈیڑھ لاکھ روپے کے ٹماٹر کا نقصان ہوا ہے۔ اب وہ جوکھم نہ لیتے ہوئے شب و روز کھیت میں گشت کر رہے ہیں۔


دراصل جگدیش نے قرض لے کر ایک ایکڑ زمین میں ٹماٹر کی فصل اگائی تھی۔ جب تک انھوں نے فصل کاٹنے اور فروخت کرنے کا فیصلہ کیا، تب تک بدمعاش (ہفتہ اور اتوار کی شب) اپنی کارستانی کر چکے تھے اور لاکھوں روپے کے ٹماٹر لوٹ لے گئے تھے۔ بدمعاشوں نے اس بات کا فائدہ اٹھایا کہ جگدیش کا گھر ان کے کھیت سے ڈیڑھ کلومیٹر دور ہے۔ بعد میں جگدیش نے ڈوڈابلاپور دیہی پولیس اسٹیشن میں شکایت درج کرائی۔ اس درمیان رائچور ضلع سے ٹماٹر لوٹ کے دوران چاقو بازی کا واقعہ سامنے آیا ہے۔

واضح رہے کہ گزشتہ 8 جولائی کو بازار میں ٹماٹر کی فصل کی رکھوالی کرتے وقت ایک کاروباری رفیع کو بدمعاش نے چاقو مار دیا تھا۔ اسے گردن میں چوٹ لگی تھی اور اسپتال میں اس کا علاج جاری ہے۔ اس درمیان چنتامنی نگر میں چوروں نے لاکھوں روپے کے ٹماٹر چوری کر لیے۔ چوروں نے ناگاسندرا اور ڈوڈہ تمکور گاؤں پر بھی ٹماٹر کے لیے حملہ کیا ہے، حالانکہ وہاں ادرک اور گوبھی کی فصلیں زیادہ اُگائی گئی تھیں۔

Follow us: Facebook, Twitter, Google News

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔


;