کانپور: صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے زرعی و صنعتی یونیورسٹی کی تعریف کی

صدر جمہوریہ نے یونیورسٹی کے ذریعہ کرائی جا رہی شجرکاری کے کاموں کی تعریف کی۔ وائس چانسلر نے بتایا کہ یونیورسٹی کے ذریعہ دلیپ نگر کے بوجھا علاقے میں اس سال 60 ہزار پودے لگائے جائیں گے۔

صدر جمہوریہ رام ناتھ کوند
صدر جمہوریہ رام ناتھ کوند
user

یو این آئی

کانپور: صدر جمہوریہ رام ناتھ کووند نے کانپور واقع چندرشیکھر آزاد زرعی و صنعتی یونیورسٹی کے سائنسدانوں کے ذریعہ کی جا رہی ریسرچ، ٹریننگ اور توسیع کے کاموں کی بھرپور تعریف کی ہے۔ تین روزہ دورے پر کانپور پہنچے صدر کووند سے ہفتہ کو یونیورسٹی کے وائس چانسلر ڈاکٹر ڈی آر سنگھ نے ملاقات کی اور انہیں یونیورسٹی کے ذریعہ گود لئے گئے ریاست کے پہلے جیو کلچرڈ گاؤں انوپ پور کے عدم تغذیہ کو دور کرنے کے لئے چلائی جا رہے مختلف کاموں کی جانکاری دی۔ رام ناتھ کووند نے اس کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ کانپور کو آدرش گاؤں بنایا جائے اور ساتھ ہی کسان زراعت میں خود کفیل بنیں اس ضمن میں یونیورسٹی کے ذریعہ بھی کام کرائے جائیں۔

صدر جمہوریہ نے یونیورسٹی کے ذریعہ کرائی جا رہی شجرکاری کے کاموں کی تعریف بھی کی۔ وائس چانسلر نے بتایا کہ یونیورسٹی کے ذریعہ دلیپ نگر کے بوجھا علاقے میں اس سال 60 ہزار پودے لگائے جائیں گے۔ اس کے علاوہ گزشتہ سال مختلف مواقع پر یونیورسٹی کے ماحولیاتی تحفظ پر کئی سرگرمیاں ہوئیں اور شجرکاری کے کام کرائے گئے ہیں۔ صدر جمہوریہ نے اپنے آبائی گاؤں پرونکھ میں گھر گھر نیوٹی کچن گارڈن لگوائے جانے کی بھی تعریف کی۔


اس موقع پر ڈاکٹر سنگھ نے صدر جمہوریہ کو یونیورسٹی کے سائنس دانوں کے ذریعہ تحریر کردہ کتاب ’آرگینک کھیتی کے آیام‘ تحفے کے طور پر پیش کیا۔ یونیورسٹی کے میڈیا انچارج ڈاکٹر خلیل خان نے بتایا کہ یونیورسٹی کے وائس چانسلر اور صدر جمہوریہ کی تقریباً 15 منٹوں کی ملاقات ہوئی۔ اس دوران وائس چانسلر نے یونیورسٹی کی فروغ کے بارے میں تفصیلی جانکاری فراہم کی۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔