جمعیت علماء نکاح کو آسان بنانے اور بیٹیوں کو خودکشی سے بچانے کیلئے آئی ہے: مفتی اطہر قاسمی

قوم و ملت کی ہزاروں لاکھوں بیٹیوں کی زندگیاں بچانے اور ان کے بوڑھے والدین کی عزت و آبرو کی پامالیوں کو روکنے کے لئے ایک کوشش ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

جمعیت علماء ارریہ آپ کے درمیان آج اسی سوچ و فکر کو جگانے اور سنت اور کاروبار میں فرق کرکے نکاح کو آسان بنانے اور بیٹیوں کو خودکشی اور ارتداد سے بچانے کے مضبوط معاہدے کے لئے حاضر ہوئی ہے۔یہ بات شعبہ اصلاح معاشرہ جمعیت علماء ارریہ کے ذریعے چلائی جارہی جہیز و نشہ مخالف مہم کے تحت ایک عظیم الشان اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے شعبہ اصلاح معاشرہ جمعیت علماء ارریہ کے صدر مفتی محمد اطہر القاسمی نے کہی۔

انہوں نے کہاکہ آپ آج اس خوبصورت جامع مسجد کے پاک صحن میں ہم سے معاہدہ کریں کہ جو ہوا سوہوا،اب اپنی آخری سانس تک جہیز کے کاروبار سے اپنے خاندان،گھرانے اور معاشرے کو پاک کریں گے اور کم از کم یہاں جتنے ایمان والے حاضر ہیں وہ اس تحریک کو اپنی زندگی کا حصہ بنائیں گے۔انہوں نے کہاکہ ہم آپ کے یہاں اس کپکپادینے والی سردی میں کوئی روایتی جلسہ کرنے نہیں آئے بلکہ قوم و ملت کی ہزاروں لاکھوں بیٹیوں کی زندگیاں بچانے اور ان کے بوڑھے والدین کی عزت و آبرو کی پامالیوں کو روکنے کے لئے آپ سے معاہدہ کرنے آئے ہیں۔


اجلاس میں موجود ہزاروں لوگوں نے جذباتی انداز میں بیک آواز کھڑے ہوکر کہا کہ ہاں ہم سب اب تیار ہیں اور انشاء اللہ اب یہاں ایسی کوئی شادیاں نہیں کی جائیں گی۔

ان سے پہلے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے نائب صدر جمعیت علماء ارریہ مولانا شاہد عادل قاسمی پرنسپل مدرسہ اسلامیہ یتیم خانہ،نائب صدر مفتی ہمایوں اقبال ندوی اور بلاک نائب سیکریٹری مفتی محمد ثاقب قاسمی نے مشترکہ طور پر کہاکہ جھوا علم و ادب کی خوبصورت بستی ہے یہاں سے ملک بھر میں علم و فن کی سربراہی ہورہی ہے۔اس لئے اپنے سماج سے جہیز و نشہ کے خلاف جمعیت کی اس مہم کو کامیاب کرکے علاقے میں ایک مثبت پیغام جانا چاہیے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔