وائس چانسلر نجمہ اختر کی اعلی تعلیم کے سکریٹری اور پولیس کمشنر سے ملاقات

پروفیسر اختر نے وزارت سے مطالبہ کیا کہ وہ یونیورسٹی لائبریری میں پولیس کارروائی کی تحقیقات کرائے۔

سوشل میڈیا
سوشل میڈیا
user

یو این آئی

جامعہ ملیہ اسلامیہ کی وائس چانسلر نجمہ اختر نے 15 دسمبر کو یونیورسٹی کیمپس میں پولیس کارروائی کے سلسلے میں وزارت انسانی وسائل کی ترقی کے سکریٹری امت کھرے اور دہلی پولیس کمشنر امولیہ پٹنائک سے منگل کے روز ملاقات کی۔

پروفیسر اختر نے مسٹر کھرے کو گذشتہ روز یونیورسٹی میں طلباء کا محاصرہ کیے جانے کے واقعے سے آگاہ کیا۔ انہوں نے وزارت سے مطالبہ کیا کہ وہ یونیورسٹی لائبریری میں پولیس کارروائی کی تحقیقات کرائے۔

مسٹر پٹنائک سے ملاقات کے دوران ، انہوں نے یونیورسٹی کیمپس میں پولیس کارروائی سے متعلق ایف آئی آر کے اندراج کا مطالبہ کیا۔ ایک سینئر پولیس افسر نے بتایا کہ پروفیسر اختر نے کمشنر پولیس اور دیگر اعلی پولیس افسران سے ملاقات کی۔

جامعہ کے طلباء نے کل دہلی پولیس کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کرتے ہوئے وائس چانسلر کے دفتر کا محاصرہ کیا تھا ، جس کے بعد پروفیسر اختر نے کہا کہ یونیورسٹی انتظامیہ کیمپس میں ’پولیس بربریت ‘ کے خلاف ایف آئی آر درج کرانے کے لئے عدالت جانے کے امکان کو تلاش کرے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ جامعہ انتظامیہ کی جانب سے دی گئی شکایت کو پولیس نے قبول نہیں کیا ہے ، لہذا وہ عدالت کا دروازہ کھٹکھٹائیں گی ۔

اہم بات یہ ہے کہ ، پچھلے سال 15 دسمبر کو ، شہریت ترمیمی قانون کے خلاف مظاہروں کے بعد ، پولیس اہلکاروں نے کیمپس میں گھس کر طلباء کے ساتھ وحشیانہ سلوک کیا تھا اور لائبریری میں توڑ پھوڑ کی تھی۔ طلبا شہریت کے قانون اور پولیس کی توڑ پھوڑ کے خلاف گذشتہ ایک ماہ سے یہاں احتجاج کررہے ہیں۔

next