تمام پروٹیکٹڈ پرسنز کو سیکورٹی فراہم کرنا ممکن نہیں ہے: آئی جی پی کشمیر

آئی جی پی کشمیر وجے کمار کا کہنا تھا کہ جموں و کشمیر پولیس ایک پیشہ ور فورس ہے جو حالات کو سنبھالنا بخوبی جانتی ہے۔

آئی جی پی کشمیر وجے کمار، تصویر یو این آئی
آئی جی پی کشمیر وجے کمار، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: کشمیر زون پولیس کے انسپکٹر جنرل وجے کمار کا کہنا ہے کہ کشمیر میں تمام پروٹیکٹڈ پرسنز کو حفاظت فراہم کرنا ممکن نہیں ہے۔ ان کا ساتھ ہی یہ کہنا تھا کہ جموں و کشمیر پولیس ایک پیشہ ور فورس ہے جو حالات کو سنبھالنا بخوبی جانتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم لوگ یہاں امن بحال کرنے کے لئے سخت محنت کر رہے ہیں اور آگے بھی کرتے رہیں گے۔ موصوف انسپکٹر جنرل نے ان باتوں کا اظہار ہفتے کے روز یہاں نامہ نگاروں کے سوالوں کا جواب دینے کے دوران کیا۔

انہوں نے کہا کہ ’میں نے بار بار کہا کہ یہاں سیکورٹی کی کوئی چوک نہیں ہوتی ہے۔ جن لوگوں کو نشانہ بنانا آسان ہے ان کو نشانہ بنا یا جا رہا ہے ہم نے ان کو سیکورٹی فراہم نہیں کی تھی کیونکہ ہر پروٹیکٹڈ پرسن کو سیکورٹی فراہم کرنا ممکن نہیں ہے‘۔


سیاسی لیڈروں کی طرف سے پولیس پر سوال اٹھانے کے بارے میں پوچھے جانے پر ان کا کہنا تھا کہ ’سیاسی لیڈران ’الٹا پلٹا‘ بولتے رہتے ہیں یہ ان کا کام ہے، لیکن ہم ایک پیشہ ور فورس ہیں ہم اپنا کام جانتے ہیں ایک ڈاکٹر کو ہی معلوم ہوتا ہے کی علاج کس طرح کرنا ہے‘۔

وجے کمار نے کہا کہ بندرو صاحب کی ہلاکت کے بعد ایک پریس کانفرنس کے دوران میں نے کہا تھا کہ ہم امن قائم کرنے کے لئے سخت محنت کر رہے ہیں اور آگے بھی کرتے رہیں گے۔ انہوں نے کہا کہ اسکول پرنسپل کی ہلاکت میں ملوث ملی ٹنٹوں کے ایک گروپ میں سے دو کو گزشتہ روز مارا گرایا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ ’مہران نے اسکول ٹیچر پر پستول سے گولیاں چلائیں اور پانچ ملی ٹنٹ یہ واقعہ انجام دینے کا حصہ تھے‘۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔