چندریان-2: حوصلہ افزائی کے لیے اِسرو نے پوری دنیا سے کہا ’شکریہ‘

اِسرو نے ایک ٹوئٹ کیا ہے جس میں لکھا ہے کہ ’’ہمارا ساتھ دینے کے لیے شکریہ۔ ہم دنیا بھر کے ہندوستانیوں کی امیدوں اور خوابوں کے دَم پر لگاتار آگے بڑھتے رہیں گے۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا

قومی آوازبیورو

چاند پر سافٹ لینڈنگ میں کامیاب نہیں ہونے کے بعد لگاتار لینڈر ’وکرم‘ سے رابطہ کرنے کی کوششیں ناکام ہوتی ہوئی نظر آ رہی ہیں، لیکن اس درمیان پوری دنیا نے جس طرح سے ہندوستانی خلائی ادارہ اِسرو کی تعریف کی اسے فراموش نہیں کیا جا سکتا۔ اِسرو نے ملک اور دنیا سے ملی حمایت اور حوصلہ افزائی کے لیے سبھی کا شکریہ ادا کیا ہے۔ دنیا بھر سے ملی حمایت کے بعد اِسرو نے گزشتہ دن ایک ٹوئٹ کیا جس میں اس نے لکھا ہے کہ ’’ہمارا ساتھ دینے کے لیے شکریہ۔ ہم دنیا بھر کے ہندوستانیوں کی امیدوں اور خوابوں کے دَم پر لگاتار آگے بڑھتے رہیں گے۔‘‘

قابل ذکر ہے کہ چندریان-2 کے لینڈر ’وکرم‘ کو 7 ستمبر کی درمیانی شب کو چاند کی سطح پر اترنا تھا لیکن وکرم چاند کی سطح سے محض 2.1 کلو میسٹر کی دوری پر اپنا راستہ بھٹک گیا۔ اِسرو کے سائنسدانوں نے اس کے بعد بتایا کہ مشن کا صرف 5 فیصد حصہ ہی متاثر ہوا ہے۔ 95 فیصد حصہ کام کرتا رہے گا۔ 5 فیصد حصے میں صرف لینڈر وکرم اور روور پرگیان سے رابطہ ٹوٹا ہے۔ اس کی وجہ سے چاند کی سطح کے بارے میں جانکاری تو نہیں مل پائے گی، لیکن مشن کا بقیہ 95 فیصد سرگرم ہے اور چاند کے بارے میں جانکاریاں دیتا رہے گا۔ چندریان-2 کا آربیٹر لگاتار چاند کے چکر کاٹتا رہے گا اور اس کے ذریعہ اِسرو کے سائنسدانوں کو جانکاری ملتی رہے گی۔ مشن چندریان-2 کا آربیٹر اگلے ایک سال تک کام کرتا رہے گا۔ آربیٹر چاند کی کئی طرح کی تصویریں کھینچ کر بھی زمین پر بھیجے گا۔

واضح رہے کہ ناسا جیسی عالمی خلائی تنظیم نے بھی چندریان-2 مشن کے لیے اِسرو کے سائنسدانوں کی خوب تعریف کی تھی۔ ناسا نے اس سلسلے میں ایک ٹوئٹ بھی کیا تھا جس میں اس نے تھا کہ ’’خلائی تحقیق بے حد مشکل کام ہے۔ ہم چاند کے جنوبی قطب پر اِسرو کے چندریان-2 مشن کو اتارنے کی کوشش کی تعریف کرتے ہیں۔‘‘