غیر ذمہ دار یوگی حکومت صرف تفرقہ بازی میں مصروف رہتی ہے: پرینکا گاندھی

ایک ٹوئٹ میں پرینکا گاندھی نے کہا، ’’سیاست کا مقصد عوام کے مسائل کو ترجیح دینا ہے۔ تعلیم، روزگار، کسانوں کی مدد... لیکن یہ غیر ذمہ دار حکومت صرف تفرقہ بازی میں مصروف رہتی ہے۔‘‘

تصویر سوشل میڈیا
تصویر سوشل میڈیا
user

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کانگریس کی جنرل سکریٹری پرینکا گاندھی نے اتوار کے روز اتر پردیش کی یوگی آدتیہ ناتھ حکومت کو تعلیم جیسے معاملے پر توجہ نہ دینے پر نشانہ بنایا۔ کانپور کی رہائشی 18 سالہ طالبہ مہیما مالی تنگی کی وجہ سے اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ سکی اور اس نے خودکشی کرلی۔ اسی واقعے کا ذکر کرتے ہوئے پرینکا نے کہا، ’’بی جے پی (بھارتیہ جنتا پارٹی) کی اتر پردیش حکومت ایسے کسی بھی معاملے پر توجہ نہیں دے رہی ہے۔‘‘

پرینکا نے اس معاملے کو اٹھاتے ہوئے ٹوئٹ کیا، ’’مالی مشکلات سے دوچار مہیما تعلیم حاصل نہیں کر پائی تو اس نے اپنی جان دے دی۔ اتر پردیش میں بی جے پی حکومت ایسے کسی بھی معاملے پر توجہ نہیں دیتی ہے۔ ہم سب کو یہ عزم کرنا چاہیے کہ ہر مہیما کی تعلیم اور حفاظت کو یقینی بنائیں۔‘‘

پرینکا نے ٹوئٹ کے ساتھ ایک لڑکی کی تصویر بھی شائع کی، ساتھ میں ایک اخباری رپورٹ موجود ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ جب مہیما دسویں جماعت کے بعد اپنی تعلیم جاری نہیں رکھ سکی تو اس نے پھانسی کے پھندے پر لٹ کر خودکشی کر لی۔

ایک دیگر ٹوئٹ میں پرینکا گاندھی نے کہا، ’’سیاست کا مقصد عوام کے مسائل کو ترجیح دینا ہے۔ تعلیم، روزگار، کسانوں کی مدد... لیکن یہ غیر ذمہ دار حکومت صرف تفرقہ بازی میں مصروف رہتی ہے۔‘‘

خبروں کے مطابق مہیما ایک رکشہ ڈرائیور کی بیٹی تھی۔ اس کی ماں نے اسے پنکھے سے لٹکا ہوا پایا تھا۔ ابتدائی تفتیش میں اس کی خودکشی کی وجہ یہ سامنے آئی ہے کہ مالی مجبوریوں کے سبب اسے 10 ویں کے بعد اپنی تعلیم چھوڑنی پڑی، جس کی وجہ سے اس نے یہ قدم اٹھایا۔