کنگنا کا بیان حکمران پارٹی کی سوچ ہے: کانگریس

پون کھیڑا نے کہا کہ جس جماعت کے لوگ آج اقتدار میں ہیں اس کا نظریہ تحریک آزادی کے خلاف رہا ہے، انہوں نے تحریک کو بھی گمراہ کرنے کی سازش کی ہے۔

فائل تصویر آئی اے این ایس
فائل تصویر آئی اے این ایس
user

یو این آئی

کانگریس سمیت کئی پارٹیوں اور رہنماؤں نے اداکارہ کنگنا رناوت کے تبصرے کو حکمراں جماعت کی سوچ قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتیہ جنتا پارٹی کو واضح کرنا چاہئے کہ وہ محترمہ رناوت کے بیان کے ساتھ ہیں یا اس کے خلاف ہیں؟

کانگریس کے ترجمان پون کھیڑا نے کہا کہ بی جے پی نے اداکارہ کو پدم شری سے نوازا ہے اور انہیں بہت آگے بڑھایا ہے۔ جس جماعت کے لوگ آج اقتدار میں ہیں اس کا نظریہ تحریک آزادی کے خلاف رہا ہے، انہوں نے تحریک کو بھی گمراہ کرنے کی سازش کی ہے۔ حکمران جماعت کو واضح کرنا چاہیے کہ شہیدوں کی توہین کرنے والے محترمہ رناوت کے اس تبصرے کے تعلق سے اس کا کیا موقف ہے۔


مسٹر کھیڑا نے کہا ’’کنگنا رناوت جو بھی بول جاتی ہیں، اس لیے ان کی باتوں پر ویسے بھی کوئی توجہ نہیں دیتا، لیکن یہ وہی کنگنا رناوت ہیں جنہیں حکمران بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نے بہت ترقی دی ہے اور پدم شری سے نوازا ہے۔ یہ حکمران جماعت کی سوچ ہے۔ حکمران جماعت کے نظریات کے لوگ تحریک آزادی کے خلاف رہے ہیں اور انہوں نے اس کے خلاف سازش بھی کی ہے۔ اگر اس سوچ کے لوگ آج اقتدار میں ہیں تو وہ کنگنا رناوت جیسے لوگوں کو پدم شری دیتے ہیں۔ ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ حکومت اس پر اپنی پوزیشن واضح کرے کہ وہ کنگنا رناوت کے اس تبصرےکے ساتھ کھڑی ہے یا اس کے خلاف ہے۔

محترمہ راناوت نے ٹائمز ناؤ سمٹ 2021 میں مرکز میں وزیر اعظم نریندر مودی کی قیادت میں حکومت کی تشکیل کے تناظر میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ہندوستان کو حقیقی آزادی 1947 میں نہیں بلکہ 2014 میں ملی۔ انہوں نے کہا کہ ’’یہ آزادی نہیں بلکہ بھیک تھی اور ملک کو حقیقی آزادی 2014 میں ملی‘‘۔


بھارتیہ جنتا پارٹی کے لیڈر ورون گاندھی نے بھی محترمہ رناوت کے بیان پر تنقید کی اور کہا کہ ’’کبھی مہاتما گاندھی کی قربانی اور تپسیا کی توہین، کبھی ان کے قاتل کا احترام، اور اب شہید منگل پانڈے سے لے کر رانی لکشمی بائی، بھگت سنگھ، چندر شیکھر آزاد، نیتا جی سبھاش چندر بوس اور لاکھوں مجاہدی آزادی کی قربانیوں کی توہین۔ اس سوچ کو پاگل پن کہوں یا ملک سے غداری؟

دریں اثنا، عام آدمی پارٹی کی قومی ایگزیکٹو کی صدر پریتی مینن نے ممبئی پولیس میں شکایت درج کرائی ہے جس میں محترمہ رناوت کے ریمارکس کو ملک سے غداری‘‘ قرار دیتے ہوئے ان کے خلاف ایف آئی آر درج کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔ عام آدمی پارٹی کے راجیہ سبھا ایم پی سنجے سنگھ نے بھی محترمہ رناوت کے ریمارکس پر سخت تنقید کی، ان کے خلاف درج شکایت کو درست قرار دیا اور اس کے لیے پریتی مینن کو مبارکباد دی۔


مسٹر سنگھ نے کہا ’’منحرف ذہنیت میں مبتلا اداکارہ کا بیان ملک کے شہیدوں کی شدید توہین ہے اور ان کا بیان پوری طرح سے ملک سے غداری ہے۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔