اتر پردیش میں سوشل میڈیا پر سماجی ہم آہنگی میں خلل ڈالنے والوں کی خیرنہیں

سوشل میڈیا کے ذریعہ قابل اعتراض /گمراہ کن/میسیج/ویڈیووغیرہ سے سماجی ہم آہنگی میں خلل ڈالنے کی کوشش کرنے والوں کے خلاف موثر کارروائی کی ہدایت

فائل تصویر، سوشل میڈیا
فائل تصویر، سوشل میڈیا

یو این آئی

اترپردیش میں سوشل میڈیا کے ذریعہ سماجی ہم آہنگی میں خلل ڈالنے والے عناصر کے خلاف سخت کارروائی کرنے کی پولیس حکام نے ہدایت دی ہے۔

پولیس کے ترجمان نے یہ اطلاع دی۔ انہوں نے بتایا کہ ڈی جی پی مسٹر سنگھ کی نگرانی میں آج یوپی کے 112ہیڈکوارٹروں میں اپرپولیس ڈائرکٹر جنرل (امن و قانون)، انسپکٹر جنرل آف پولیس، لا اینڈ آرڈر، نے ریاست کے زونل/زونل اینڈ ڈسٹرکٹ سوشل میڈیا سیل میں مقرر انچارج افسر اور انچارج میڈیل سیل اور ضلع میڈیا انچارج اور سائبر سیل انچارج کو ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعہ موجودہ حالات میں درپیش چیلنجوں کے تعلق سے سوشل میڈیا کے ذریعہ قابل اعتراض /گمراہ کن/میسیج/ویڈیووغیرہ سے سماجی ہم آہنگی میں خلل ڈالنے کی کوشش کرنے والوں کے خلاف موثر کارروائی اور عام لوگوں کو ریاست میں سماجی خیرسگالی اور آپسی بھائی چارہ قائم رکھنے کے لئے سوشل میڈیا کے مختلف پلیٹ فارموں پر بیدار رہنے کے سلسلہ میں تفصیلی ہدایات جاری کیں۔

انہوں نے بتایا کہ آج بھیجی گئی ہدایات میں کہا گیا کہ سوشل میڈیا کے مختلف ذرائع پر قابل اعتراض پوسٹ کرنے والے افراد کے خلاف معاملہ درج کرکے ان کے سوشل میڈیا اکاونٹ کو لاک کرانے کی کارروائی کرتے ہوئے ایسے افراد کے خلاف فوری طورپر قانونی کارروائی کی جائے۔ سوشل میڈیا پر قابل اعتراض پوسٹ کو محفوظ رکھنے کے عمل کے بارے میں بھی بتایا گیا تاکہ پوسٹ ڈیلیٹ ہونے پر بھی ثبوت دستیاب رہے۔

ترجمان نے بتایا کہ گذشتہ پانچ برسوں میں سوشل میڈیا پر قابل اعتراض/گمراہ کن پوسٹ کرنے والے لوگوں کے سلسلہ میں معلومات جمع کرنے کے ساتھ ساتھ ایسے لوگوں کی،جو قابل اعتراض پوسٹ کرکے سماج میں افراتفری پھیلانے کی کوشش کرتے ہیں، نشاندہی کرکے تھانہ وار رجسٹر بناکر ان کا رجسٹریشن کیا جائے اور نظر رکھی جائے۔

Published: 9 Nov 2019, 5:41 AM