جموں و کشمیر میں ہر ہفتے ایک معصوم کا خون بہایا جاتا ہے: محبوبہ مفتی

محبوبہ مفتی نے ٹوئٹ میں کہا کہ جموں و کشمیر میں حالات اس حد تک بگڑ چکے ہیں کہ ہر ہفتے ایک معصوم شہری کا خون بہایا جاتا ہے۔

پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی، تصویر یو این آئی
پی ڈی پی صدر محبوبہ مفتی، تصویر یو این آئی
user

یو این آئی

سری نگر: پی ڈی پی صدر اور سابق وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی نے جموں و کشمیر کی موجودہ سیکورٹی صورتحال پر حکومت کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا ہے کہ یہاں ہر ہفتے ایک معصوم کا خون بہایا جاتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کی طرف سے سیکورٹی کے نام پر جابرانہ اقدام کرنے کے باوجود بھی لوگوں کی ہلاکتوں کا سلسلہ جاری ہے۔

موصوف صدر نے ان باتوں کا اظہار سری نگر میں گزشتہ شام ایک سیلزمین کی نامعلوم بندوق برادروں کے ہاتھوں ہلاکت کے رد عمل میں منگل کے روز اینے ایک ٹوئٹ میں کیا۔ انہوں نے ٹوئٹ میں کہا کہ ’جموں و کشمیر میں حالات اس حد تک بگڑ چکے ہیں کہ ہر ہفتے ایک معصوم شہری کا خون بہایا جاتا ہے‘۔


ان کا ٹوئٹ میں مزید کہنا تھا کہ ’یہ بدقسمتی کی بات ہے کہ سیکورٹی کے نام پر جابرانہ اقدام کرنے کے باوجود بھی لوگوں کو مارا جا رہا ہے اور لوگوں کو وقار اور نارملسی کا کوئی احساس نہیں ہے۔ میں پساندگان کی خدمت میں تعزیت کرتی ہوں‘۔ بتادیں کہ سری نگر کے بہوری کدل علاقے میں پیر کی شام نامعلوم بندوق برداروں نے محمد ابراہیم خان ولد غلام محمد خان ساکن اشٹنگو بانڈی پورہ نامی ایک سیلز مین کو نزدیکی سے گولیاں بر سا کر ابدی نیند سلا دیا۔

قومی آواز اب ٹیلی گرام پر بھی دستیاب ہے۔ ہمارے چینل (qaumiawaz@) کو جوائن کرنے کے لئے یہاں کلک کریں اور تازہ ترین خبروں سے اپ ڈیٹ رہیں۔