مجھے انتقامی سیاست کا شکار بنایا گیا: ڈی کے شیو کمار

کرناٹک کے سابق وزیر اور کانگریس کے سینئر رہنما ڈی کے شیو کمار نے منگل کے روز کہا کہ انہوں نے کچھ بھی غلط نہیں کیا ہے اور وہ انتقامی سیاست کے شکار ہیں۔

تصویر اے آئی این ایس
تصویر اے آئی این ایس

قومی آوازبیورو

نئی دہلی: کرناٹک کے سابق وزیر اور کانگریس کے سینئر رہنما ڈی کے شیو کمار نے منگل کے روز کہا کہ انہوں نے کچھ بھی غلط نہیں کیا ہے اور وہ انتقامی سیاست کے شکار ہیں۔ شیو کمار اس وقت انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کی حراست میں ہیں۔ انہوں نے ایک ٹوئٹ میں کہا، ’’میں دوہرانا چاہتا ہوں کہ میں کچھ بھی غلط نہیں کیا ہے اور میں انتقامی سیاست کا شکار ہوں۔‘‘

واضح رہے کہ منی لانڈرنگ کے ایک معاملہ میں شیو کمار سے چار دنوں تک پوچھ گچھ کرنے کے بعد انہیں تین ستمبر کو گرفتار کیا گیا تھا۔

کانگریس رہنما نے ٹوئٹ میں مزید کہا، ’’آپ تمام کی جانب سے مجھے جو حمایت اور آشیرواد حاصل ہو رہا ہے اور خدا و عدلیہ پر جو میرا بھروسہ ہے اس کے مطابق مجھے پورا یقین ہے کہ میں قانونی اور سیاسی دونوں طریقوں سے فاتح رہوں گا۔‘‘ واضح رہے کہ تفتیش کے سلسلہ میں شیو کمار کی بیٹی ایشوریا کو 12 ستمبر کو پوچھ گچھ کے لئے سمن جاری کیا گیا۔

دریں اثنا کرناٹک کی راجدھانی بنگلورو کے ووکالیگا سنگھ کے ارکان نے ڈی کے شیو کمار کی گرفتاری کی مخالفت میں راج بھون تک مارچ نکالا۔ واضح رہے کہ شیو کمار ووکالیگا طبقہ کے ہی رہنما ہیں اور اس طبقہ میں ان کی خاصی پکڑ ہے۔

مرکزی تفتیشی ایجنسی نے گزشتہ سال ستمبر میں شیو کمار اور نئی دہلی میں واقع کرناٹک بھون کے ملازم ہنومنتیا اور دیگران کے خلاف منی لانڈرنگ کا معاملہ درج کیا گیا تھا۔